25 جون 2019
ایف بی آر افسران سے گرفتاریوں کے صوابدیدی اختیارات ختم کرنا چاہتا ہوں ،شبر زیدی

ایف بی آر افسران سے گرفتاریوں کے صوابدیدی اختیارات ختم کرنا چاہتا ہوں ،شبر زیدی

    چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کا کہنا ہے کہ ایمنسٹی اسکیم میں کسی قسم کا ابہام نہیں ہے اور اس کے لیے فنانس بل میں بھی کوئی تبدیلی نہیں کی جائے گی۔ کراچی چیمبر میں خطاب کرتے ہوئے چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی کا کہنا تھا کہ شعبہ جاتی آڈٹس سے ایف بی آر کو کوئی اضافی ریونیو حاصل نہیں ہوتا، آڈٹس سے صرف خوف کا ماحول پھیلتا ہے، غلطیاں ہمارے لوگوں کی بھی ہے، ہماری انڈسٹری کو فراڈ کے لیے استعمال کیا گیا۔ چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ میں نے چھاپے مارنے سے روک دیا، اب تاجر گرفتاری سے کیوں خوفزدہ ہیں، ایف بی آر افسران سے گرفتاریوں کے صوابدیدی اختیارات مکمل طور پر ختم کرنا چاہتا ہوں جب کہ ایمنسٹی اسکیم میں کسی قسم کا ابہام نہیں ہے، ایمنسٹی اسکیم کے لیے فنانس بل میں بھی کوئی تبدیلی نہیں کی جائے گی۔ تاجربرادری ماہ رمضان کے احترام میں اسمگل شدہ اشیاء کی فروخت ازخود بند کریں، افغان ٹرانزٹ کے علاوہ بھی پاکستان میں اسمگلنگ کی جارہی ہے، بندرگاہوں پر انسداد اسمگلنگ پر کام جاری ہے، تاجر برادری بھی کردار ادا کریں اور اگر چیمبر احتجاج نہ کرنے کا وعدہ کرے تو اسمگلڈ اشیا کے خلاف چھاپوں کے احکامات جاری کرتا ہوں۔ شبر زیدی کا کہنا تھا کہ ایف بی آر کو خام مال کی درآمد پر وصول کردہ ودہولڈنگ ٹیکس بالآخر ریفنڈ کرنا ہوگا، چند خام مال پر تو ریلیف دیا جاسکتا ہے سب پر ٹیکس چھوٹ نہیں ملے گی، چیمبر ایسے خام مال کی فہرست فراہم کرے اس شرح سے ودہولڈنگ ٹیکس کی کٹوتی کی جارہی ہے، خام مال کی درآمدات پر3 اور6 فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس عائد نہیں ہونا چاہیے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟