23 اکتوبر 2020
تازہ ترین
امریکی صدارتی امیدوار نے ٹرمپ کے سامنے ’انشاءاللہ‘ کہہ دیا

امریکی صدارتی امیدوار نے ٹرمپ کے سامنے ’انشاءاللہ‘ کہہ دیا

صدر ٹرمپ اور جو بائیڈن کے درمیان پہلے صدارتی مباحثے میں گرماگرمی کے دوران جو بائیڈن نے صدر ٹرمپ کو شٹ اپ کال دیدی۔ جو بائیڈن نے ڈونلڈ ٹرمپ کو امریکا میں کورونا کے بڑھتے کیسز اور اموات کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہر شخص جانتا ہے ٹرمپ جھوٹے ہیں ٹرمپ صحت سے متعلق مسائل پر جھوٹ بولتے رہے. امریکی صدارتی انتخابات کے لیے مباحثے کے دوران صدارتی امیدوار جوبائیڈن نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹیکس ریٹرن کے حوالے سے بیان پر ’انشاءاللہ ‘ کہہ کر امریکی مسلمانوں کو حیران کر دیا۔   ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ وہ اپنے ٹیکس ریڑن کے حوالے سے بہت جلد معلومات عام کریں گے۔اس پر جوبائیڈن نے طنزیہ مسکراہٹ کے ساتھ انشاءاللہ کہا۔   ان کے اس انداز کو سوشل میڈیا پر مقبولیت ملی اور مسلمانوں امریکیوں نے خوب پذیرائی کی۔   ۔جو بائیڈن نے ٹرمپ پر الزام عائد کیا کہ ا نہوں نے وبا کے خطرات پر پردہ ڈالا جواب میں ٹرمپ نے ان کے سیاسی کریئر پر بات کی اور کہا کہ آپ نے 47 برس تک کچھ نہیں کیا‘کرس والیس نے دونوں امیدواروں سے سوال کیا کہ وہ لاک ڈاﺅن کے بعد معیشت کی بحالی کے لیے کیا منصوبے سوچے ہوئے ہیں. ٹرمپ نے دعویٰ کیا کہ انہوں نے تاریخ کی سب سے عظیم معیشت قائم کی ہے‘انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس سے پہلے بے روزگاری کی شرح انتہائی کم تھی، لاکھوں امریکی غربت سے باہر نکلے اور امریکہ میں تاریخی اقتصادی ترقی ہوئی کرس والیس نے صدر ٹرمپ سے پوچھا کہ کیا یہ درست ہے کہ آپ نے 2016 اور 2017 میں فیڈرل انکم ٹیکس کی مد میں 750 ڈالر ادا کیے‘جواب میں صدر ٹرمپ نے کہا کہ میں نے کئی لاکھ ڈالر ادا کیے، میں نے تین کروڑ 80 لاکھ ڈالر ایک سال اور دو کروڑ 70 لاکھ ڈالر ایک سال میں ادا کیے. اس موقع پر جو بائیڈن نے انھیں چیلنج کیا کہ وہ اپنے ٹیکس ظاہر کریں تو ٹرمپ بولے آپ انہیں دیکھ لیں گے جب آڈٹ ختم ہو جائے گا اگرچہ اب ٹی وی دیکھنے کا رجحان کم ہوتا جا رہا ہے لیکن پھر بھی لاکھوں امریکی روزانہ ٹی وی دیکھتے ہیں 1960 میں ڈیموکریٹک پارٹی کے سینیٹر جان ایف کینیڈی اور نائب صدر رچرڈ نکسن پہلے ٹی وی مباحثے میں شامل ہوئے تھے.


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟