22 اکتوبر 2020
تازہ ترین
16تاریخ کو اپوزیشن استعفے دے دیتی تو جنرل الیکشن ہو سکتے تھے، شیخ رشید

16تاریخ کو اپوزیشن استعفے دے دیتی تو جنرل الیکشن ہو سکتے تھے، شیخ رشید

  شیخ رشید نے کہا ہے کہ 16 تاریخ کی رات تمام رہنما آر می چیف قمر جاوید باجوہ سے ملے تھے اور اگر اس دن اگر یہ اپنے استعفے دے دیتے تو تبدیلی آ سکتی تھی اور جنرل الیکشن ہو سکتے تھے۔ فیصل آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ چار مہینے کا ٹائم آل پارٹیز کانفرنس نے دیا ہے اور چار مہینے کا ہی ٹائم میں نے 31 دسمبر تک دیا ہے، آپ ان کی حالت دیکھیے گا۔  ان کا کہنا تھا کہ آج بیروزگاری، آٹے چینی کی قیمتیں اور مہنگائی اس لیے بڑھی ہے کیونکہ یہ چور لوٹ کر باہر لے گئے اور بلاول صاحب نے کل کہا ہے کہ اگر شیخ رشید ہو گا تو میں نہیں آؤں گا، یہ نہیں کہا کہ میں نہیں جاؤں گا۔ تحریر جاری ہے‎   شیخ رشید نے کہا کہ یہ قومی سلامتی کی بات کرتے ہیں، بلاول تم پیدا بھی نہیں ہوئے تھے جب میں قومی سلامتی کا رکن تھا، اپنی تاریخ پیدائش نکالو، میں غیرملکی امور کا چار مرتبہ رکن رہا ہوں، میں نوابزادہ نصراللہ کے ساتھ کشمیر کمیٹی کو لندن اور امریکا میں لیڈ کرتا تھا، اب امریکا نے مجھ پر پابندی لگائی ہے، اس وقت مجھ پر پابندی نہیں تھی۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟