30 ستمبر 2020
تازہ ترین
منی لانڈرنگ ریفرنس میں شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں 21 ستمبر تک توسیع

منی لانڈرنگ ریفرنس میں شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں 21 ستمبر تک توسیع

لاہور ہائیکورٹ نے منی لانڈرنگ ریفرنس میں قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں 21 ستمبر تک توسیع کردی ہے. عدالت عالیہ میں جسٹس سردار احمد نعیم کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے شہباز شریف کے خلاف منی لانڈرنگ ریفرنس میں درخواست ضمانت پر سماعت کی اس موقع پر شہباز شریف اپنی ضمانت کی مدت ختم ہونے کے باعث خود عدالت کے روبرو پیش ہوئے.   سماعت کے دوران عدالتی بینچ کو آگاہ کیا گیا کہ شہباز شریف کے وکیل اعظم نذیر تارڑ اسلام آباد میں مصروف تھے، لہٰذا مذکورہ معاملے میں شہباز شریف کی درخواست ضمانت پر سماعت کو 3 ہفتوں کے لیے ملتوی کیا جائے.   عدالت میں موجود شہباز شریف نے بھی موقف اپنایا کہ انہیں قومی اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کرنی ہے، لہٰذا کیس کی سماعت کو 3 ہفتوں کے لیے ملتوی کیا جائے تاہم عدالت نے ان کی اس استدعا کو مسترد کردیا‘ عدالت نے شہباز شریف کی درخواست ضمانت میں 21 ستمبر تک توسیع کردی اور آئندہ سماعت پر وکلا کو دلائل دینے کی ہدایت کردی.   خیال رہے کہ 17 اگست کو نیب نے احتساب عدالت میں شہباز شریف، ان کے دو بیٹوں اور کنبے کے دیگر افراد کے خلاف منی لانڈرنگ کا 8 ارب روپے کا ریفرنس دائر کیا تھا بعد ازاں 20 اگست کو لاہور کی احتساب عدالت نے شہباز شریف اور ان کے اہل خانہ کے خلاف منی لانڈرنگ ریفرنس سماعت کے لیے منظور کیا تھا. ریفرنس میں بنیادی طور پر شہباز شریف پر الزام عائد کیا گیا کہ وہ اپنے خاندان کے اراکین اور بے نامی دار کے نام پر رکھے ہوئے اثاثوں سے فائدہ اٹھا رہے ہیں جن کے پاس اس طرح کے اثاثوں کے حصول کے لیے کوئی وسائل نہیں تھے.


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟