30 ستمبر 2020
تازہ ترین
  پھل و سبزی منڈی بادامی باغ  سمیت دیگر   منڈیاں بھی کچرا کنڈی کا منظر پیش کر نے لگیں ۔

پھل و سبزی منڈی بادامی باغ  سمیت دیگر منڈیاں بھی کچرا کنڈی کا منظر پیش کر نے لگیں ۔

شہر میں ہونے والی  بارش کے سلسلے نے جہاں شہر کے سیوریج نظام کا پول کھول دیا ،وہیں  شہر کی سب سے بڑی پھل و سبزی منڈی بادامی باغ  سمیت دیگر فروٹ اور پھل منڈیاں بھی کچرا کنڈی کا منظر پیش کر نے لگیں ۔ ہر طرف کیچڑ اور گندگی سے منڈی کا ماحول تعفن زدہ ہو گیا ہے۔لاہور کی منڈیوں میں انتظامیہ کی نااہلی  کے باعث  آڑھتیوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جو ان بارشوں کے باعث  مناسب انتظامات  نہ ہونے سے لاکھوں کا نقصان اٹھا چکے ہیں  ۔لاہور کی منڈیوں میں ناکافی سیوریج سسٹم اور صفائی نہ ہونے سے جا بجا کچرے کے ڈھیر انتظامیہ کا منہ چڑانے لگے۔ عام دکانوں کے مقابلے میں منڈی سے ملنے والی سستی سبزیوں اور پھلوں کی خریداری مشکل ہو گئ۔ آڑھتی اور خریدار، سبزیاں، پھل لینے کے لیے کیچڑ کی دلدل عبور کرنے پر مجبورہیں۔  دوسری جانب شہریوں کا شکوہ کرتے ہوئے کہنا ہے کہ سبزی منڈی کم اور کچرا کنڈی زیادہ لگتی ہے ہر بارش پر گندگی کے ڈھیر درد سر بن جاتے ہیں۔ سبزیاں اور پھل صحت کے لئے بہترین قرار دئیے جاتے ہیں لیکن بادامی باغ سبزی منڈی میں حفظان صحت کے اصول کہیں نظر نہیں آتے۔انھوں نے وزیر اعلی پنجاب اور کمشنر لاہور سے صورتحال پر نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا ۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟