09 اگست 2020
حکومت کا 15 ستمبر سے ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان

حکومت کا 15 ستمبر سے ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان

 وفاقی حکومت نے 15 ستمبر سے ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کردیا۔گزشتہ روز وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس ہوئی تھی جس میں تعلیمی اداروں کو ایس او پیز کے ساتھ کھولنے اور امتحانات لینے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔آج نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے اجلاس میں تعلیمی ادارے کھولنے کی منظوری دے دی گئی ہے جس کے بعد وفاقی وزیر شفقت محمود نے ستمبر سے باقاعدہ تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کیا۔این سی او سی کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر شفقت محمود نے کہا کہ ستمبر کے پہلے ہفتے میں دوبارہ صحت کے  معاملات کو مد نظر رکھا جائے گا جس کے بعد  15  ستمبر سے ملک بھر کے تمام تعلیمی ادارے کھل جائیں گے۔وفاقی وزیر نے بتایا فیصلہ ہوا ہے کہ مختلف تعلیمی اداروں کو انتظامی دفاتر کھولنے کی اجازت دی جائے کیونکہ آن لائن ایجوکیشن میں جن علاقوں میں جہاں انٹرنیٹ نہیں طلبہ کو پریشانی کا سامنا ہے اس لیے اسکولوں سے متعلق مختلف تجاویز پر غور کیا جارہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اسکول کھلنے سے قبل تعلیمی اداروں میں ایس او پیز پر عمل درآمد سے متعلق ٹریننگ ہوگی اور یونیورسٹیوں میں بھی تجویز ہے کہ عید سے پہلے یا بعد پی ایچ ڈی طلبہ کو محدود تعداد میں بلالیں۔شفقت محمود نے کہا کہ وبا کے باعث تعلیمی ادارے بند کرنے پڑے، امتحانات روکنے پڑے لیکن مختلف تعلیمی اداروں سے تجاویز آئی ہیں کہ ہمیں امتحانات لینے دیں، اس کے علاوہ میڈیکل کے طلبہ اور یونیورسٹی میں داخلہ ٹیسٹ لینے کی تجویز بھی  آئی ہے، یہی وجہ ہے کہ ضروری امتحانات اور داخلہ ٹیسٹ سے متعلق پابندیوں میں کچھ نرمی کررہے ہیں۔  


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟