18 نومبر 2019
تازہ ترین
دورہ امریکا کامیاب رہا، امریکا سے تعلقات بہترین رہیں گے، وزیراعظم عمران خان

دورہ امریکا کامیاب رہا، امریکا سے تعلقات بہترین رہیں گے، وزیراعظم عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ دورہ امریکا اپنی نوعیت کا کامیاب دورہ ہے، پاکستان برابری کی سطح پر خود کو منوانے میں کامیاب رہا۔ وزیراعظم نے وفاقی کابینہ کے اجلاس سے خطاب میں کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ جلد پاکستان کا دورہ کریں گے، مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے میں پاکستان نے بھرپور کردار ادا کیا، پاکستان اور امریکا کے تعلقات ماضی کی نسبت مستقبل میں بہترین رہیں گے۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے امریکی صدر کو دورہ پاکستان کی دعوت کے حوالے سے کابینہ کو اعتماد میں لیا۔ خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے 21 سے 23 جولائی تک امریکا کا تین روزہ سرکاری دورہ کیا۔ اس دورے کے دوران وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ، امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو، امریکی اراکین کانگریس کے علاوہ پاکستانی نږاد تاجروں سے بھی ملاقات کی۔ اس کے علاوہ وزیراعظم عمران خان نے کیپیٹل ارینا میں جلسے سے خطاب بھی کیا اور مختلف ٹی وی چینلز کو انٹرویوز بھی دیئے۔ علاوہ ازیں وفاقی کابینہ نے 17 جولائی کو اقتصادی رابطہ کمیٹی ٟ ای سی سیٞ  اجلاس میں ہونے والوں فیصلوں کی توثیق کردی۔  سابق وزرائے اعظم یوسف رضا گیلانی اور راجہ پرویز اشرف اور سابق صدر ممنون حسین  کے بیرون ملک دوروں پر ہونے والے اخراجات کی تفصیلات بھی وفاقی کابینہ کے اجلاس میں پیش کی گئیں۔ وفاقی کابینہ کو بتایا گیا کہ یوسف رضا گیلانی نے 4 برسوں میں 48 غیر ملکی دوروں پر 57 کروڑ روپے سے زائد خرچ کئے۔ یوسف رضا گیلانی نے ایک کروڑ 5 لاکھ روپے کی ٹِپ اور ایک کروڑ 22 لاکھ روپے کے تحائف دیئے۔ راجہ پرویز اشرف نے ایک سال میں 9 بیرون ملک دورے کئے جن پر 10 کروڑ روپے سے زائد خرچ ہوئے، راجہ پرویز اشرف نے 47 لاکھ روپے ٹِپ کی مد میں ادا کئے۔ سابق صدر ممنون حسین نے پانچ سال میں 31 غیرملکی دورے کیے جن پر 27 کروڑ 82 لاکھ روپے خرچ ہوئے۔ ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے کہا سرکاری خزانے کا بے دریغ استعمال کیا گیا، سابق حکمرانوں سے عوام کے ٹیکس کا پیسہ واپس لیا جائے گا۔ وفاقی کابینہ نے 5 ریگولیٹری اتھارٹیز کے انتظامی اختیارات متعلقہ وزارتوں سے لے کر کابینہ ڈویږن کو منتقل کرنے، پاسپورٹ سے پیشے کا کالم ختم کرنے اور وزارت خزانہ کے ایڈیشنل سیکرٹری برائے اخراجات کو قرضہ تحقیقاتی کمیشن کا سیکرٹری مقرر کرنے کی بھی منظوری دی


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟