23 ستمبر 2018
تازہ ترین
یمن، فوجی حملے میں  اہم کمانڈر سمیت38حوثی باغی ہلاک

یمنی سرکاری  فوجی حملے میں  اہم کمانڈر سمیت38حوثی باغی ہلاک  کو قیدی بنا لیا گیا،  حملے میں یمنی زمینی فوج کو عرب اتحاد کی فضائیہ کی مدد حاصل تھی۔ بین الاقوامی میڈیا کے مطابق یمن کے صوبے صعدہ کے مشرقی ضلع الحشوہ میں سرکاری فوج نے حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں کو غیر متوقع حملے کا نشانہ بنایا۔ اتوار کے روز ہونے والی اس کارروائی میں حوثی ملیشیا کے 38 ارکان مارے گئے اور متعدد زخمی ہو گئے۔ اس کے علاوہ 32 حوثیوں کو قیدی بنا لیا گیا جن میں زمینی کمانڈر ابو یاسر الخولانی شامل ہے۔ ایک عسکری کمانڈر کے مطابق کارروائی میں یمنی فوج کو عرب اتحاد کے طیاروں کی معاونت حاصل تھی۔ اس دوران کئی اہم ٹھکانوں کو آزاد کرا لیا گیا جن میں نمایاں ترین الربعہ کا پہاڑی سلسلہ اور اس کا عسکری کیمپ ہے۔ یمنی فوج نے مغربی ساحل کے علاقے میں عرب اتحاد کی معاونت سے ایک نیا عسکری آپریشن شروع کیا ہے۔ آپریشن کا مقصد صنعا سے حوثیوں کے لیے آنے والی امدادی سپلائی لائن منقطع کرنا ہے۔ اس کے علاوہ فوج کی توپوں نے زبید شہر کے اطراف حوثی ملیشیا کے جتھوں اور ٹھکانوں کو گولہ باری کا نشانہ بنایا۔ عسکری ذرائع نے واضح کیا ہے کہ مذکورہ آپریشن کے دوران یمنی فوج مشرقی ضلع  الدریہمی سے پیش قدمی کر رہی ہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟