13 نومبر 2018
ہالی وڈ میں لاریب عطا اللہ کے فن کے جوہر

پاکستان کے لیجینڈری گلوکار عطا اللہ خان عیسیٰ خیلوی کی صاحبزادی لاریب عطا اللہ کئی ہالی وڈ فلموں میں وږول ایفیکٹس (VFX) آرٹسٹ کے طور پر کام کر چکی ہیں اور اب انہوں نے مشن امپوسبل اور مشن امپوسبل فال آئوٹ میں بھی اپنی صلاحیتوں کے جوہر دکھائے ہیں۔  لاریب اب تک ایکس مین، گوڈزیلا، دی وائج آف دی ڈان ٹریڈرز اور پرنس کیسپیئن میں بھی وی ایف ایکس آرٹسٹ کے طور پر اپنی مہارت دکھا چکی ہیں۔ لاریب نے اپنا کیریئر 2006 میں 19 برس کی عمر میں شروع کیا اور تعلیم کے دوران وہ اپنے ساتھیوں کے ساتھ اکیلی لڑکی تھیں۔ برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کو انٹرویو دیتے ہوئے لاریب نے بتایا کہ جب میں نے اس کورس کا آغاز کیا تو مجھے VFX کی کوئی سمجھ نہیں تھی، مجھے صرف یہ پتہ تھا کہ یہ فلم کے لئے جادو ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جب پہلی مرتبہ فلم ٹوائے سٹوری دیکھی تو میں اس سے بہت متاثر ہوئی جس کو دیکھ کر میں نے سوچا یہ کیسے ہوتا ہے؟ مجھے پہلے نہیں پتہ تھا کہ یہ کیسے ہوتا ہوگا لیکن چونکہ یہ فن اور ٹیکنالوجی پر مشتمل تھا جسے میں کرنا چاہتی تھی۔ لاریب نے کہا کہ ان کا مقصد پاکستانی خواتین کو متاثر کرنا ہے اور وہ چاہتی ہیں کہ اس شعبے میں زیادہ سے زیادہ پاکستانی خواتین اور نوجوان آئیں۔ پاکستان کی لاریب عطا نے بطور VFX آرٹسٹ ہالی وڈ میں اپنے قدم جما کر ملک کا نام روشن کر دیا ، جس پر سب کو فخر ہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟