23 ستمبر 2018
تازہ ترین
گائے سے مہنگا گائے کا سوپ

 چین میں ایک ایسا ریستوران بھی ہے جہاں گائے اور نوڈل کا سوپ ملتا ہے لیکن اس کی قیمت خود مکمل گائے سے بھی زیادہ ہے۔ ہیبائی صوبے میں شیجیاز ہوانگ شہر میں واقع ایک چینی ریستوران میں دنیا کا سب سے مہنگا سوپ فروخت ہورہا ہے، جس کی قیمت 2014 ڈالر یا پاکستانی دو لاکھ 40 ہزار روپے ہے۔ سوپ کا نام  ہائوزونگہائو بیف نوڈل سوپ ہے جو نائیو گینگشن ریستوران میں فروخت کیا جارہا ہے اور سوشل میڈیا پر غیر معمولی مقبولیت حاصل کر رہا ہے۔ اس کا ایک پیالہ لاکھوں روپے کا ہے اور ریستوران کا دعویٰ ہے کہ اس کی تیاری میں انتہائی مہنگے اجزا استعمال کئے جاتے ہیں۔ ذرائع کے مقامی نمائندوں نے جب ریستوران سے اتنے قیمتی سوپ کا سوال کیا تو وہاں کے مینیجر نے بتایا کہ سوپ کی تیاری میں چار اجزا آسمانی ہیں، چار زمینی اور چار بحری ہیں یعنی زمین، آسمان اور سمندر سے لئے گئے اجزا کے ذریعے سوپ تیار کیا گیا، لیکن ان اجزا کی تفصیل نہیں بتائی گئی۔ ریستوران انتظامیہ نے کہا کہ ایک پیالہ سوپ کا آرڈر ایک ماہ پہلے دینا ضروری ہے، اس کی تیاری میں 12 ماہر ترین شیف اپنا فن دکھاتے ہیں، چھ ماہ قبل اس سوپ کو مینو میں شامل کیا گیا اور اب تک صرف چار افراد نے ہی اسے استعمال کیا ہے۔ ریستوران کی انتظامیہ نے مہنگی ترین ڈش کے الزام کے جواب میں کہا ہے کہ اس کی تیاری اتنی مہنگی ہے کہ انہیں کوئی منافع نہیں ہورہا۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟