20 مارچ 2019
تازہ ترین
کشمش کا استعمال بینائی  کیلئے بہترین

قدرت کی ان گنت نعمتوں میں سے ایک نعمت انگور بھی ہے، انگور کو اس کی اصل حالت میں کھانے کے بے حد فائدے ہیں لیکن اگر اسے سکھا کر کشمش بنا لیا جائے تو یہ دوا کا کام بھی سرانجام دیتا ہے۔ اس میں فائبر کی وافر مقدار کے ساتھ ٹارٹارک ایسڈ بھی شامل ہوتا ہے جو ہلکے جلاب جیسا اثر دکھاتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق آدھا اونس کشمش کا روزانہ استعمال نظام ہاضمہ میں دوگنی تیزی سے کام کرنے کی صلاحیت پیدا کرتا ہے۔ اس کے علاوہ کشمش میں آئرن پایا جاتا ہے جو خون کی کمی دور کرنے میں انتہائی معاون ثابت ہوتا ہے۔ کشمش میوے کے طور پر یا کسی بھی میٹھی چیز میں شامل کرکے کھایا جاسکتا ہے تاہم ذیابیطس کے شکار افراد کو یہ میوہ زیادہ کھانے سے گریز کرنا چاہئے۔ کشمش میں پوٹاشیم اور میگنیشم بھی پایا جاتا ہے جو معدے کی تیزابیت میں کمی پیدا کرتا ہے۔ معدے میں تیزابیت کی شدت بڑھنے سے جلدی اور جوڑوں کے امراض، بالوں کا گرنا، امراض قلب اور کینسر تک کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ کشمش کا استعمال آنکھوں کو مضر فری ریڈیکلز کے نقصان سے تحفظ دیتا ہے جبکہ عمر بڑھنے کے ساتھ پٹھوں کی کمزوری، موتیا اور بینائی کی کمزوری سے بھی بچاتا ہے۔ وٹامنز، پروٹین اور دیگر غذائی اجزائ کشمش کے استعمال سے جسم میں موثر طریقے سے جذب ہوتے ہیں۔ اسی لئے باڈی بلڈرز اور ایتھلیٹس اپنی خوراک میں کشمش لازمی استعمال کرتے ہیں۔ اس میں موجود آئرن نیند کا معیار بہتر بناتا ہے جبکہ آئرن، پوٹاشیم، بی وٹامنز اور اینٹی آکسائیڈنٹس بلڈ پریشر کو معمول پر رکھنے میں مدد دیتے ہیں۔ یہ قدرتی فائبر کی وافر مقدار بھی اپنے اندر رکھتی ہے جو شریانوں کی اکڑن کو کم کرتی ہے۔ اس میں کیلشیئم بھی موجود ہوتا ہے جو ہڈیوں کی مضبوطی برقرار رکھنے میں مدد دیتا ہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟