24 اپریل 2019
تازہ ترین
کراچی، نجی اسپتال عملے کی مبینہ غفلت،9 ماہ کی بچی وینٹی لیٹر پر پہنچ گئی

کراچی، نجی اسپتال عملے کی مبینہ غفلت،9 ماہ کی بچی وینٹی لیٹر پر پہنچ گئی

 گلستان جوہر کے نجی اسپتال میں مبینہ غفلت کے باعث 9 ماہ کی نشوا کی حالت بگڑ گئی ہے اور اسے وینٹی لیٹر پر رکھا گیا ہے۔  میڈیا کے مطابق کراچی کے علاقے گلستان جوہر کے نجی اسپتال دارالصحت کے عملے کی مبینہ غفلت اور غلط انجیکشن لگنے کے باعث 9 ماہ کی ننھی بچی کی حالت بگڑ گئی ہے اور وہ اسپتال کے وینٹی لیٹر پر ہے۔ بچی کے والد کا کہنا ہے کہ 9 ماہ کی نشوا پیٹ کے درد کی شکایت لئے داخل ہوئی تھی، کل بچی صحت مند ہونے کے بعد گھر جانے کے لئے تیار تھی، ڈاکٹر نے نرسنگ اسٹاف کو آخری خوراک دینے کی ہدایت کی، غلط انجکشن لگانے کے باعث نشوا فوری طور پر تڑپنے لگی، بچی زندگی اور موت کی کشمکش میں ہے اور وینٹی لیٹر پر ہے۔ اسپتال کا عملہ غیر تربیت یافتہ ہے۔ اسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ انتظامیہ کی جانب سے معاملے پر فوری ایکشن لیا گیا، اور مبینہ غفلت برتنے والے  عملے کو معطل کر دیا گیا ہے۔ انتظامیہ کی جانب سے موقف پیش کیا گیا ہے کہ بچی کو ایک ہفتے پہلے اسپتال میں داخل کیا گیا تھا اور اسے ڈائریا تھا، بچی کو کل صحت مند ہونے کے بعد ڈسچارج کیا جانا تھا، تاہم بچی کے والد کے الزام کے تحت ، تحقیقات شروع کردی گئی ہیں اور پتہ لگایا جارہا ہے کہ بچی کی حالت انجیکشن لگنے سے بگڑی ہے  یا کوئی اور معاملہ ہے، تاہم جب تک بچی اسپتال میں داخل ہے تمام اخراجات اٹھائے جائیں گے۔ دوسری جانب وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے 9 ماہ کی بچی کو غلط انجیکشن لگانے کے واقع کا نوٹس لیتے ہوئے سیکریٹری صحت کو انکوائری کرنے کی ہدایت کردی ہے اور کہا ہے کہ انکوائری کر کے مجھے رپورٹ دی جائے اور مجرمانہ غفلت کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا تعین کیا جائے۔ سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کے سربراہ ڈاکٹر منہاج قدوائی کا کہنا ہے کہ ہم نے اسپتال کا دورہ کیا ہے اور پتہ چلا ہے کہ بچی سے متعلق انتظامیہ نے کچھ اقدامات اٹھائے ہیں، بچی کے والد اگر ان اقدامات سے مطمئن نہیں تو ہمیں تحریری طور پر درخواست دے سکتے ہیں، درخواست کے بعد معاملے کی تحقیقات کریں گے، تاہم اسپتال ہیلتھ کیئر کمیشن کے پاس رجسٹرڈ ہے اس لئے اس کے خلاف پولیس کارروائی نہیں کرسکتی۔ ان کا کہنا تھا کہ  اسپتال انتظامیہ کو بھی ہدایت کی ہے کہ وہ معاملے کو سلجھائے اور متاثرہ فیملی کی مدد کرے، جب کہ اسپتال انتظامیہ معیار کو مزید بہتر بنانے کے لیے لائسنسنگ حاصل کرے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟