کالی آندھی نے بنگلہ دیش کو ہرا دیا

جیسن ہولڈر کی تباہ کن بائولنگ کی بدولت کالی آندھی نے بنگلہ دیش کو دوسرے اور آخری کرکٹ ٹیسٹ میچ میں یکطرفہ مقابلے کے بعد 166 رنز سے ہرا کر سیریز میں 2-0 سے وائٹ واش کر دیا، ویسٹ انڈین ٹیم دوسری اننگز میں 129 رنز بنا کر آئوٹ ہو گئی اور اس نے بنگال ٹائیگرز کو فتح کیلئے مجموعی طور پر 334 رنز کا ہدف دیا، جس کے تعاقب میں مہمان بنگلہ دیشی ٹیم تیسرے روز اپنی دوسری اننگز میں 168 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی، شکیب الحسن کے سوا بنگلہ دیش کا کوئی بھی کھلاڑی ہولڈر کی تندوتیز گیندوں کے سامنے زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکا، شکیب 54 رنز بنا کر نمایاں رہے، 5 کھلاڑی دوہرا ہندسہ بھی عبور نہ کر سکے، ہولڈر نے میچ میں 11 وکٹیں لیکر ٹیم کی جیت میں کلیدی کردار ادا کیا، ہولڈر میچ اور سیریز کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔ کنگسٹن ٹیسٹ کے تیسرے روز ویسٹ انڈین ٹیم نے 19 رنز ایک کھلاڑی آئوٹ پر دوسری ادھوری اننگز دوبارہ شروع کی تو ڈیوون سمتھ 8 رنز پر کھیل رہے تھے، شکیب الحسن نے غیرمعمولی بائولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے میزبان کھلاڑیوں کو جم کر کھیلنے کا موقع نہ دیا اور پوری ٹیم 129 رنز بنا کر آئوٹ ہو گئی اور کالی آندھی نے بنگلہ دیش کو فتح کیلئے مجموعی طور پر 334 رنز کا ہدف دیا، سمتھ 16، کیموپال 13، کیرن پاویل 18، شے ہوپ 4، ہٹمائر 18، روسٹن چیس 32، کپتان جیسن ہولڈر اور میگل کمنز ایک، ایک، شینن گبرائل بغیر کوئی رن بنائے آئوٹ ہوئے، ڈورچ نے 12 رنز بنائے اور آئوٹ نہیں ہوئے، شکیب الحسن نے 6، مہدی حسن میراز نے 2 تیجل اسلام اور ابوجاوید نے ایک، ایک وکٹ لی۔ جواب میں بنگلہ دیشی ٹیم مطلوبہ ہدف حاصل کرنے میں ناکام رہی اور پوری ٹیم دوسری اننگز میں 168 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئی، شکیب 54 رنز بنا کر نمایاں رہے، تمیم اقبال، قمرالاسلام ربی، ابوجاوید اور نورالحسن بغیر کوئی رن بنائے، لٹن داس 33، مومن الحق 15، محموداللہ 4، مشفق الرحیم 31، مہدی حسن میراز 10 رنز بنا کر آئوٹ ہوئے، تیجل اسلام 13 رنز بنا کر ناٹ آئوٹ رہے، ہولڈر نے 6، چیس نے2، گبرائل اور پال نے ایک، ایک کھلاڑی کو آئوٹ کیا۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟