15 نومبر 2018
تازہ ترین
پیٹ کی چربی، آنتوں کے کینسر کا پیش خیمہ

پیٹ کے اہم اندورنی اعضا کے آس پاس جمع ہونےوالی چربی صحت پر بھی اثر انداز ہوتی ہے، جلد کی چربی کے مقابلے میں آنت پر چربی زیادہ تیزی سے بنتی ہے اور اسی رفتار سے کم بھی ہوتی ہے، بڑھتا ہوا پیٹ کئی مہلک امراض جیسے امراض قلب، بلڈ پریشر، ٹائپ ٹو ذیابیطس، آنتوں کا کینسر، سانس کا بار بار رکنا اور چلنا وغیرہ کا پیش خیمہ ہوسکتا ہے۔ ہر وقت جنک فوڈ کا استعمال آپ کی صحت کو متاثر کرتا ہے اور آپ کا وزن بڑھانے سے خصوصاً پیٹ کی چربی میں اضافے کا باعث بنتا ہے۔ جو مختلف بےمارےوں کا باعث ہے۔ اےک مکمل غذا جس میں پھل ، سبزےاں اور پروٹےن شامل ہو، اگر اعتدال سے کھائی جائے تو وہ پےٹ کو بڑھنے سے روکتی ہے۔ ان میں موجود وٹامن، معدنیا ت اور اینٹی آکسیڈنٹس آپ کو تروتازہ رکھتے ہوئے غذائی کمی کو پورا کرتے ہیں ۔ماہرین  صحت کے مطابق پیٹ بھر کر کھانا نہ کھائیں بلکہ پچھلا کھانا ہضم ہونے اور بھوک لگنے کے بعد ہی کھائیں۔ ماہرین صحت، صحت مند رہنے کے لئے روزانہ تیس منٹ ورزش یا واک کرنے کا مشورہ دیتے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیٹ کی مختلف ورزشوں کے ذریعے آپ فالتو چربی تیزی سے گھٹا سکتے ہیں اور وزن والی ورزشیں کرکے پٹھوں کو بھی مضبوط کر سکتے ہیں ۔ اس مقصد کے لئے آپ جم بھی جوائن کر سکتے ہیں ۔ رات کے کھانے کے بعد لیٹنے کی بجائے چہل قدمی کرنے کو زندگی کا حصہ بنائیں ۔ مارکیٹ میں چربی کم کرنےوالی دوائوں کو استعمال کرنے کی بجائے مذکورہ بالا مشوروں پر عمل کرکے آپ اپنے پیٹ کی چربی کو گھٹا سکتے ہیں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟