پیروں کو 180ڈگری پر موڑ نے والا شخص

ایک امریکی شہری حیرت انگیز طور پر اپنے پائوں کو 180 ڈگری کے رخ پر موڑ کر الٹے قدموں چل سکتا ہے۔ امریکی شخص موسس لینہم کو 14 سال کی عمر سے اپنے پائوں کو مخالف سمت میں موڑ کر پیدل چلنے پر مسٹر پلاسٹک کے نام سے پکارا جاتا ہے اور ایسی مثال دنیا میں کہیں اور نہیں ملتی۔ انہیں یہ انوکھی صلاحیت اس وقت حاصل ہوئی جب وہ ورزش کے دوران جم میں دو بلند دیواروں کے درمیان تنی ہوئی ایک رسی پر چلنے کی کوشش میں نیچے گر گئے تھے اس حادثے کے بعد موسس کو اپنے پیروں میں نمایاں تبدیلی محسوس ہوئی اور جلد وہ جان گئے کہ بغیر تکلیف کے وہ اپنی ٹانگوں کو 180 ڈگری کے زاویئے پر موڑ کر چل سکتے ہیں۔ ماہرین طب نے کہا کہ ایسا ٹانگوں، گھٹنوں اور کولہوں کے جوڑوں میں کارٹیلیج کی دگنی مقدار کی موجودگی سے ہوتا ہے۔ انسانی جسم کے جوڑوں میں ہڈیوں کے درمیان ایک نرم، چکنی اور لچک دار ہڈی ہوتی ہے جسے کرکری ہڈی یا کارٹیلیج کہا جاتا ہے۔ یہ کسی جوڑ پر ہڈیوں کے آپس میں ملنے والے مقام پر ہڈیوں کی سطح کو چکنا رکھتی ہے جس سے ہڈیوں کو حرکت اور موڑنے کے دوران تکلیف نہیں ہوتی اور ہم آسانی سے اٹھ بیٹھ سکتے ہیں۔ تاہم موسس میں کارٹیلیج اور متعلقہ ٹشوز دگنی تعداد میں ہونے کی وجہ سے وہ اپنے پائوں کو گھٹنے سے 180 ڈگری زاویئے تک موڑ سکتے ہیں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟