21 نومبر 2018
تازہ ترین
پاکستان کی یورپی ممالک کے لئے برآمدات میں37فی صد اضافہ ہوا ہے،وفاقی وزیرتجارت

وفاقی وزیر تجارت انجینئر خرم دستگیر نے کہا ہے کہ جی ایس پی  پلس سے پاکستان اور یورپی یونین کے مابین باہمی تجارت کی گنجائش میں اضافہ ہوا ہے  کیونکہ گزشتہ تین سالوں سے نہ صرف پاکستان کی یورپی ممالک کے لئے برآمدات میں37فی صد اضافہ ہوا ہے بلکہ یورپ سے مشینری اور کیمیکلز اور کپڑا رنگنے والے رنگوں پر مشتمل یورپی یونین کے ممالک سے پاکستان کے لئے برآمدات میں بھی 14فی صد اضافہ ہوا ہے ۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار یہاں یورپی پارلیمنٹ میں بین الا قوامی تجارت کی کمیٹی کے رکن جان زہرادل سے ملا قات کے دوران کیا ۔   وفاقی وزیر تجارت نے جان زہرادل کو حکومت پاکستان کے ان اقدامات سے آگاہ کیا جو کہ  پاکستان میں مصنوعات کی تیاری کے حالت کار میں بہتری کے لئے کئے جا رہے ہیں ۔وزیر نے کہا کہ پاکستان امداد کی بجائے تجارت کے ذریعے اپنی معیشت کو مضبوط بنانے پر بھر پور توجہ دے رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کی اقتصادی ترقی کا اس ملک کے امن و امان سے بڑا گہرا تعلق ہے اور اب پاکستان میں اقتصادی و سماجی اشاریوں میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ وفاقی وزیر نے یورپی پارلیمنٹ کے پاکستانی نږاد اراکین سے بھی ملا قاتیں کیں ۔ جن میں پاکستان فرینڈ شپ گروپ کے سر براہ اور یورپی پارلیمنٹ کے رکن سجاد کریم اور پورپی پارلیمنٹ میں ڈیفنس اور سیکورٹی کی ذیلی کمیٹی کے وائس چیئر مین اور رکن یورپی پارلیمنٹ افضل خان شامل تھے ۔ انہوں نے ان اراکین کی یورپی پارلیمنٹ میں پاکستان کی حمایت کو سراہا ۔ وفاقی وزیر تجارت نے  یورپی پارلیمنٹ کی خارجہ تعلقات کی کمیٹی کے سابق سربراہ اور رکن پارلیمنٹ المر بروک سے بھی ملا قات کی۔ ان ملاقاتوں میں وزیر تجارت خرم دستگیر کے ہمراہ سیکرٹری وزارت تجارت عظمت رانجھا بھی موجود تھے ۔ انہوں نے یورپی ایکسٹرنل ایکشن سروس کے گلوبل اور اقتصادی امور کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل کرسٹین لیفلر کو بریف بھی کیا۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟