18 نومبر 2018
تازہ ترین
پاکستان میں یومِ عاشور کے ماتمی جلوسوں کا پرامن اختتام

نامہ نگار شہزاد ملک کے مطابق راولپنڈی میں سکیورٹی کے لیے دس ہزار سے زائد پولیس اہلکار تعینات کیے گئے تھے اور پولیس کے ان اہلکاروں کو جلوس کے راستوں پر تعینات کرنے کے علاوہ ان راستوں میں واقع عمارتوں کی چھتوں پر بھی تعینات کیا گیا تھا۔

راولپنڈی شہر میں کرنل مقوبل حسین کی امام بارگاہ سے برآمد ہونے والا مرکزی جلوس اپنے روایتی راستے سے ہوتا ہوا امام بارگاہ قدیم میں پرامن طریقے سے اختتام پذیر ہوا۔

سکیورٹی کے سخت انتظامات کے علاوہ یوم عاشور پر فوج کو بھی چوکس رکھا گیا ۔ راولپنڈی، پنجاب کے اُن تین شہروں میں سے ایک ہے جسے چند سال قبل فرقہ وارانہ فسادات کے بعد سے حساس ترین قرار دیا گیا تھا۔

دو سال قبل ماتمی جلوس پر قریبی مدرسے سے مبینہ طور پر ہتک آمیز نعرے لگانے پر ہنگامہ ہوگیا تھا جس کے نتیجے میں آٹھ سے زائد افراد ہلاک ہوگئے تھے اور مظاہرین نے متعدد دکانوں کو نذر آتش کردیا تھا اور تاحال یہ مقدمہ راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں زیر سماعت ہے


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟