15 نومبر 2018
ووگ کے سرورق پر سہانا کی تصویر تنقیدکا شکار

بھارت کے مشہور جریدے ووگ انڈیا کے حالیہ شمارے کے سرورق پر بالی وڈ کنگ شاہ رخ خان کی صاحبزادی سہانا خان کے فوٹو شوٹ کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر متعدد صارفین نے جریدے کے سرورق پر سہانا خان کی تصویر کواقربا پروری قرار دیا اور کہا کہ وہ کوئی سٹار نہیں اور نہ ہی ان کے کریڈٹ پر کوئی فنی کامیابیاں ہیں، لیکن شاہ رخ خان کی وجہ سے انہیں بھی سٹار قرار دیا جارہا ہے۔ ایک بھارتی صحافی  نے ووگ کے سرورق پر لکھے گئے الفاظ کو دہرایا اور لکھا کہ طالبہ، تھیٹر پسند، مستقبل کی سٹار اور سٹار کی بیٹی جو تب تک ان کی فلموں کے لئے خرچ کریں گے جب تک کہ وہ سٹار نہیں بن جاتیں۔ علاوہ ازیں انہوں نے بالی وڈ ہدایت کار کرن جوہر کو بھی تنقید کرتے ہوئے لکھا کہ قربا پروری کی دھوم ہے ۔ بھارتی ٹی وی اداکارہ بھومیکا چڈا نے بھی اپنی ٹویٹ میں خفگی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ تصور کریں کہ ہر دن کوئی نیا امتحان ہو اور آپ کو کسی بھی وجہ سے مسترد کر دیا جائے، لیکن وہ وجہ ٹیلنٹ نہ ہو۔ ساتھ ہی انہوں نے لکھا کہ مجھے اس پر اعتراض ہے کہ جب سہانا خان ووگ انڈیا آفس گئیں تو ان کو کسی نے نہیں کہا ہوگا کہ آپ مطلوبہ معیار پر پورا نہیں اترتیں۔ ایک صارف نے ووگ انڈیا کے تمام امیدواروں پر میم بنائی اور دکھایا کہ سب آڈیشن کے لئے موجود ہیں، سہانا کو تو یہاں بھی جانے کی ضرورت نہیں پڑی ہوگی۔ واضح رہے کہ 18 سالہ سہانا خان نے اب تک بالی وڈ میں کوئی ڈیبیو نہیں دیا ہے اور ان کی تعلیم کا سلسلہ جاری ہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟