22 اکتوبر 2019
تازہ ترین
وزیراعلیٰ سندھ سید مراد شاہ کے زیر صدارت ٹیکسٹائل سٹی پر اجلاس

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد شاہ کے زیر صدارت ٹیکسٹائل سٹی پر اجلاس

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد شاہ کے زیر صدارت ٹیکسٹائل سٹی پر اجلاس ہواجس میں صنعت کے وزیر منظور وسان، چیف سیکریٹری رضوان میمن، پرنسپل سیکریٹری نوید کامران بلوچ، محکمہ صنعت کے سیکریٹری رحیم سومرو شریک ہوئے۔منظور وسان نے وزیراعلیٰ کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت ٹیکسٹائل سٹی بند کرنا چاہتی ہے۔وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ یہ ٹیکسٹائل سٹی میں بند ہونے نہیں دوں گا۔منظور وسان نے کہا کہ پورٹ قاسم اتھارٹی نے ٹیکسٹائل سٹی کے لیے زمین بیچی تھی۔وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ یہ زمین سندھ حکومت کی ہے، پورٹ قاسم کس طرح بیچ سکتی ہے یہ سازش ہے،اس ترقی سے کچھ لوگ پریشان ہو رہے ہیں۔سیکریٹری محکمہ صنعت نے کہا کہ وفاقی حکومت سمجھتی ہے یہ ٹیکسٹائل سٹی کراچی میں ممکن نہیں۔اگر ٹیکسٹائل سٹی گوجرانوالہ اور فیصل آباد میں ممکن ہے تو کراچی میںکیوں نہیںکراچی پورٹ سٹی ہے۔ سندھ کپاس کی بوائی کا صوبہ ہے۔ یہاںٹیکسٹائل سٹی زیادہ کامیاب ہے۔ہم ٹیکسٹائل سٹی کو کامیاب بنائیں گے۔مراد علی شاہ نے کہا کہ سندھ محفوظ ہاتھوں میں ہے۔ ہم صوبے اور ان کو عوام کا بھرپور دفاع کریں گے۔ وفاقی حکومت نے ٹیکسٹائل سٹی کے بورڈ پر بھی سندھ کو صحیح نمائندگی نہیں دی۔ انہوں نے منظور وسان کو اس پر کام کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں عدالت جانا پڑا تو ہم جائیں گے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟