15 نومبر 2018
وزیراعظم کی بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سے ڈیم فنڈ میں حصہ ڈالنے کی اپیل

 وزیرِ اعظم عمران خان کا قوم کے نام اہم پیغام میں کہنا تھا کہ میں نے تمام معاملات کو عوام کے سامنے لانے کا وعدہ کیا تھا، پاکستان کو بہت سے ایشوز اور مسائل کا سامنا ہے لیکن سب سے اہم مسئلہ پانی ہے۔ وزیرِاعظم نے کہا کہ پاکستان کو شدید پانی کی قلت کا سامنا ہے، ہمارے پاس صرف 30 دن پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہے، آج صرف ہر پاکستانی کے حصے میں ایک ہزار کیوبک میٹر پانی رہ گیا ہے، اس صورتحال میں ڈیمز بنانا انتہائی ناگزیر ہو گیا ہے، تمام پاکستانی ڈیمز فنڈ میں اپنا اپنا حصہ ڈالیں۔ وزیرِاعظم نے کہا کہ پاکستان میں پانی کا مسئلہ 30 سال پرانا ہے، ہماری ساری پولیٹکل لیڈرشپ کو پانی کے مسئلے بارے میں سوچنا چاہیے تھا لیکن کوئی توجہ نہیں دی گئی۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر تمام اوورسیز پاکستانی صرف ایک ہزار ڈالر بھیجیں تو ہم دیامیر اور بھاشا ڈیم بنانے کے قابل ہو جائیں گے بلکہ ہمیں کسی سے قرض مانگنے کی ضرورت نہیں پڑے گی، اگر بیرون ملک مقیم 80 سے 90 لاکھ پاکستانی اپنا اپا حصہ ڈالیں تو صرف پانچ سال میں ہم ڈیمز بنا سکتے ہیں۔ وزیرِ اعظم نے قوم کو پانی کے مسئلے پر مستقبل کی صورتحال سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے پاس اناج اگانے کیلئے پانی نہ ہوا تو پاکستان میں قحط پڑ سکتا ہے، اگر ڈیم نہ بنائے تو 2025 تک ملک میں خشک سالی ہو جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کو ڈیم کیلئے فنڈ اکٹھا کرنے پر خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے وزیر اعظم فنڈ کے قیام کا اعلان کرتا ہوں، تمام پاکستانی پانی کے مسئلے کے حل کیلیے اس میں اپنا اپنا حصہ ڈالیں، میں قوم کو یقین دلاتا ہوں کہ ان کے پیسے کی حفاظت کروں گا۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟