وزیراعظم کاکراچی  کیلئے25ارب کے ترقیاتی پیکیج کا اعلان

کراچی میں امن کی صورتحال مزید بہتر کی جائیگی، رینجرز اپنا کام جاری رکھی گی، کراچی میں امن قائم ہونے سے انویسٹمنٹ بڑھ رہی ہے،شاہدخاقان عباسی

 وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کراچی کیلیے25 اور حیدرآباد کے لیے 5  ارب روپے کے پیکیج کا اعلان کر دیا۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سندھ کے ترقیاتی منصوبوں،ٹریفک کے نظام کو بہتر بنانے اورکراچی میں امن وامان کے قیام کیلئے مشاورت کی گئی، کراچی کے لیے25 ارب کے ترقیاتی پیکیج پرگورنرسندھ کی زیر نگرانی جلد کام شروع ہوگا ،پیکیج میںصاف پانی کی فراہمی کا پیکیج بھی شامل ہے جبکہ حیدرآباد میں اعلان کردہ 5 ارب روپے کی اسکیموں کوجلد مکمل کیا جائے گا، 18ویں ترمیم کے بعد فنڈز صوبائی حکومت کو دےدیے جاتے ہیں،  لوکل گورنمنٹ کی ذمے داری بنتی ہے کہ علاقے میں ترقیاتی کام کرے۔ انہوں نے کراچی یونیورسٹی میں میڈیکل کالج اور اسپتال کی تعمیر کا اعلان بھی کیا۔ شاہد خاقان نے کہا کہ تاجروں کی مشکلات کو ترجیحی بنیاد پر حل کیاجائے گا، کراچی میں امن کی صورتحال مزید بہتر کی جائیگی، رینجرز اپنا کام جاری رکھی گی۔ ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی پالیسیوں کو جاری رکھا جائے گا،کراچی میں امن قائم ہونے سے انویسٹمنٹ بڑھ رہی ہے، جب تک پارٹی چاہے گی، وزیر اعظم رہوں گا، نواز شریف نے فیصلہ تسلیم کیا ، اب گھر جا رہے ہیں، انہوں نے کسی ادارے کو ٹارگٹ نہیں کیا،انہوں نے بس اپنے خیالات کا اظہار کیا،میرے وزیر اعظم نواز شریف صاحب ہی ہیں، نواز شریف پارٹی کے لیڈر ہیں اور رہیں گے، ایئر بلیو کے بورڈ سے استعفیٰ دے چکا ہوں۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ایم کیوایم ایک سیاسی جماعت ہے، قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے ایم کیوایم کی مشکلات کو حل کیاجائے گا،ایم کیوایم نے ہمیں کسی شرط کےبغیر سپورٹ کیا تھا،سندھ اسمبلی سے پاس احتساب بل کا جائزہ لینا پڑے گا، گورنر سندھ وفاق کے نمائندے ہیں، کوئی سیاسی کردار ادا نہیں کر رہے، ٹریفک حادثے میں بچے کی ہلاکت پر افسوس ہے، نواز شریف نے بھی بچے کے انتقال پر افسوس کا اظہار کیا۔