24 اپریل 2019
تازہ ترین
نیب اور پولیس کا شہباز شریف کی بیٹی کے گھر پر مبینہ چھاپہ

نیب اور پولیس کا شہباز شریف کی بیٹی کے گھر پر مبینہ چھاپہ

ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نیب نے پولیس کے ہمراہ شہباز شریف کی بیٹی کے گھر کا گھیرائو کرکے چھاپا مارا ہے۔ مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے الزام عائد کیا ہے کہ نیب اور پولیس کی ٹیموں نے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی بیٹی کے گھر کا گھیرائو کرکے چھاپہ مارا ہے۔  پولیس نے ماڈل ٹائون ایچ بلاک میں واقع شہباز شریف کی بیٹی کے گھر بغیر اطلاع کے چھاپہ مارا، یہ اقدام کسی بھی نوٹس کے بغیر اٹھایا گیا جو قابل مذمت اور تشویش کا باعث ہے۔ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے چند روز قبل کہا تھا کہ شریف خاندان کے خلاف نئے کیسز بنائے جائیں گے، اب عوام کو سمجھ جانا چاہئے کہ عمران خان کا ویژن کیا ہے کہ شریف خاندان کو جھوٹے کیسز میں پھنسایا جائے گا۔ دوسری جانب ایس پی ماڈل ٹائون لاہور علی وسیم کا کہنا ہے کہ پولیس کی جانب سے نہ چھاپہ مارا گیا ہے نہ نفری بھیجی گئی ہے، جبکہ نیب کا بھی کہنا ہے کہ نیب کی ٹیم صرف نوٹس دینے گئی تھی جو وصول کرا کر واپس آگئی ہے۔ نیب لاہور کے مطابق سابق وزیراعلی پنجاب میاں شہباز شریف کی اہلیہ اور بیٹیوں کو طلبی کے نوٹس بھجوائے گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق نصرت شہباز، رابعہ اور جویرہ کو طلبی کے نوٹس بھجوائے گئے ہیں، نیب ٹیم نوٹسز دینے کے بعد شہباز شریف فیملی کے گھر سے واپس چلی گئی ہے۔ مریم اورنگزیب سے جب اس بارے میں استفسار کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ پولیس اور نیب نے گھر کا گھیرائو کرکے نوٹس دیا، بغیر کسی اطلاع کے گھیرائو کرنا کس قسم کا احتساب ہے۔ 


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟