09 اپریل 2020
تازہ ترین
نواز شریف پاناما کیس سے بچنے والے نہیں ، عمران

نواز شریف پاناما کیس سے بچنے والے نہیں ، عمران

 چیرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ پاناما کیس میں اگر قطری شہزادے کا خط جھوٹا نکلا تو نواز شریف کی چھٹی ہوجائے گی۔ قصور میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا کہ جب پاناما میں نوازشریف پکڑے گئے تو تب پہلی بار انہوں نے اعتراف کیا کہ باہر اربوں کے اپارٹمنٹس ہیں، نواز شریف سے پوچھا تو انہوں نے پہلے اسمبلی میں جواب دیا اور پھر عدالت میں کہتے ہیں کہ اس تقریر کو استثنا ہے، وہ سیاسی بیان تھا لہٰذا انہوں نے جھوٹ بولا جب کہ جھوٹ بولنے پر جمہوریت میں وزیراعظم استعفیٰ دے دیتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان بدل رہا ہے نواز شریف کو سپریم کورٹ میں ہم لے کر آئے اور پہلی بار سپریم کورٹ میں وزیراعظم کی تلاشی لی جارہی ہے، قطری کا خط جھوٹ نکلا تو نواز شریف کی چھٹی ہوجائے گی لہٰذا نواز شریف اب پاناما کیس سے بچنے والے نہیں،  نواز شریف سے جواب مانگا تو کہتے ہیں کہ خاص آدمی ہوں، استثنیٰ حاصل ہے۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاناما لیکس پر جو بھی فیصلہ ہو گا، پاکستان بدل جائے گا۔ ۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ لاہور میں زہرہ بی بی نے جناح اسپتال کے ٹھنڈے فرش پر جان دیدی  کیونکہ یہاں کے بے حس حکمرانوں کو ملک کے اسپتالوں کی حالت کا علم ہی نہیں جب کہ خود یہ لوگ چیک اپ کے لیے باہر جاتے ہیں یہاں اپنا چیک اپ تک کرانے کے لیے تیار نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ شریف برادران صرف اشتہاروں پر اربوں روپے خرچ کرتے ہیں لیکن ان کو شرم، حیا اور خوف تک نہیں کہ انہیں اللہ کے پاس بھی جانا ہے تاہم پاکستان اب جس دور سے گزررہا ہے وہاں فیصلہ ہوگا کہ کونسا پاکستان بنے گا۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ نواز شریف صاحب ڈائریکٹ بات کریں، وزرائ کو پیچھے نہ لگائیں، وقت آنے والا ہے تحریک انصاف کی حکومت آئے گی، نواز شریف مجھ سے خود بات کریں، موٹو گینگ سے گالیاں نہ پڑوائیں۔ عمران خان کا یہ بھی کہنا تھا کہ جیمز بانڈ کے بعد ایک اور آیا ہے جس کا نام ہے پرائز بانڈ۔ انہوں نے یاد دلایا کہ مشرف دور میں دانیال عزیز نواز شریف کو کرپٹ قرار دیتے تھے۔ عمران خان نے دعویٰ کیا کہ کشتی ڈوبنے والی ہے اس لئے فضل الرحمان اور محمود اچکزئی نظر نہیں آ رہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ فضل الرحمن کو خدشہ ہے کہ نواز شریف کے برے دن آنے والے ہیں، اسفند یار ولی کی بھی ان دنوں آواز نہیں آ رہی۔ عمران خان نے یہ بھی کہا کہ 18 ٹرین حادثات ہو چکے مگر سعد رفیق نواز شریف کی خدمت کر رہے ہیں۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟