16 نومبر 2018
تازہ ترین
ناقص گھی اور تیل کی فروخت بند


سپریم کورٹ میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے غیر معیاری گھی اور تیل کی فروخت کے خلاف از خود نوٹس کی سماعت۔ کی۔سماعت کے دوران یوٹیلٹی اسٹورز کے وکیل مصطفی رمدے نے گھی اور تیل کی رپورٹ جمع کرائی جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ رپورٹس والی تھیوری نہیں عدالت کو زمینی حقائق بتائیے، ہمیں اپنے اداروں پر بھروسہ ہے مگر انسانی حقوق کی خلاف ورزی برداشت نہیں کریں گے، کوالٹی کنٹرول کی رپورٹ آنے کے بعد یوٹیلٹی اسٹورز پر دستیاب گھی اور تیل سے متعلق فیصلہ کریں گے۔
عدالت نے ملک بھر میں تمام برانڈز کے گھی اور تیل کی کوالٹی رپورٹ 10 دن میں جمع کرانے اور ٹیسٹنگ لیبارٹریز کی موجودگی اور استطاعت کے بارے بھی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا۔ عدالت عظمیٰ نے کوالٹی کنٹرول کی مکمل سیمپل رپورٹ نہ آنے تک اسٹاک کو فروخت نہ کرنے کی ہدایت کردی۔ 


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟