16 نومبر 2018
نادرا کا پختون شہریوں کیلئے لاہورمیں سپیشل سینٹر کا اعلان

 وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر نادرا نے پختون شہریوں کے شناختی کارڈ بنانے کے لیے لاہورمیں سپیشل سینٹربنانے کا اعلان کردیا۔ لاہورمیں مقیم پختونوں نے وزیراعظم عمران خان کی رہائش گاہ کے سامنے احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا تھا کہ ان کے شناختی کارڈز کے مسائل حل کیے جائیں۔ وزیراعظم کی ہدایت پر  چیئرمین نادرا عثمان یوسف نے نادرا ہیڈکوارٹرلاہورمیں پختون شہریوں اوران کے نمائندوں سے ملاقات کی اور مسائل سنے۔ پختون شہریوں نے شکایات کے انبار لگاتے ہوئے کہا کہ نادرا حکام شہریوں کو تنگ کرتے ہیں اور حقارت سے دیکھتے ہیں جب کہ ہمیں دفاتر سے نکال دیا جاتا ہے، حالانکہ ہم بھی  پاکستان کے وفادار شہری ہیں۔ چیئرمین نادرا نے کہا کہ وزیراعظم کی ہدایت پر پختون شہریوں کے مسائل سنے ہیں، مسئلہ یہ بھی ہے کہ افغان باشندوں کے شناختی کارڈز ِبنانے کے لیے مقامی پختون انہیں اپنا بھائی ظاہرکرتے ہیں، جن پختونوں نے خود کو افغان مہاجر ظاہرکرکے امدادی رقم حاصل کی وہ اب  پھرواپس پاکستان آگئے ہیں۔  پختونوں کے شناختی کارڈزبنانے کے لیے سپیشل سینٹربنایا جائے گا، ملک بھر میں ڈیڑھ لاکھ  لوگوں کے شناختی کارڈز کا مسئلہ ہے، یہ مسئلہ 40 سال سے درپیش ہے،راتوں رات حل نہیں ہوسکتا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں چیئرمین نادرا نے کہا کہ الیکشن والے روز آر ٹی ایس سسٹم کریش نہیں ہوا تھا، جبکہ سپریم کورٹ کی ہدایت پر سمندرپار پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کےلیے سسٹم تیارکردیا ہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟