24 ستمبر 2018
تازہ ترین
نائجیریا ،بوکو حرام کے حملے میں 30 فوجی ہلاک

نائجیریا کے شمال مشرق کے سرحدی علاقے میں ملٹری بیس پر نائجیئرین فوجیوں اور بوکو حرام جنگجوؤں کے مابین مسلح جھڑپ میں 30 فوجی ہلاک ہوگئے۔ غےر ملکی خبررساں ادارے  کے مطابق  جنگجوؤں سے بھڑک ٹرک بورنو ریاست کے شمالی حصہ میں گاؤں زری پر پہنچے اور انہوں نے فوجی چھاؤںی پر حملہ کردیا۔ دوسری جانب ملٹری افسر نے بتایا کہ ٴبوکو حرام کے جنگجو بھاری اسلحہ کے ساتھ ٹرکوں میں آئے تھے اور لڑائی ایک گھنٹے تک جاری رہیٴ۔افسرا نے بتایا کہ ٴہمارے 30 فوجی جاں بحق ہو گئے اور حملہ شام 4 بجے ہوا   ٴجنگجوؤں نے فوجیوں کو عارضی طور پر پسپا کردیا تھاٴ۔اس حوالے سے بتایا گیا کہ گزشتہ 3 مہینے میں بوکو حرام کے حملوں میں شدت آئی ہے۔ دیگر ملٹری ذرائع نے بتایا کہ فضائی مدد کے نتیجے میں بوکو حرام کےجنگجوؤں نے پسپائی اختیار کی لیکن وہ فوجیوں کو بھاری مقدر میں اسلحہ لے گئے۔ایک نے بتایا کہ ٴجنگی جہازوں کے حملے میں دہشت گردوں کو بھاری جانی نقصان اٹھانا پڑاٴ۔ایک اور ملٹری ذرائع نے بتایا کہ جنگجوؤں نے ایک اور ملٹری بیس پر حملہ کرکے تقریباً 17 فوجیوں کو ہلاک اور 14 زخمی کردیا۔واضح رہے کہ رواں برس جولائی میں نائیجیریا کی نیشنل پیٹرولیم کارپوریشن این این پی سی کی تیل تلاش کرنے والی ٹیم پر بوکو حرام کے حملے میں 50 سے زیادہ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ غیر ملکی خبر رساں اداروں کے مطابق نائیجیریا کی بورنو ریاست کے علاقے میگومیری میں گذشتہ روز بوکو حرام کے مسلح جنگجوؤں نے این این پی سی کے ماہرین کے قافلے پر دھاوا بولا تھا۔تاہم بعد ازاں یہ اطلاعات موصول ہوئی تھی کہ بوکو حرام سے تعلق رکھنے والے شدت پسندوں نے انہیں ہلاک کرنا شروع کردی۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟