26 اپریل 2019
تازہ ترین
مچھلی جوڑوں کے درد کیلئے انتہائی مفید

مچھلی جوڑوں کے درد کیلئے انتہائی مفید

ماہرین صحت کے مطابق عام غذائیں گنٹھیا کے مرض میں انتہائی مفید ثابت ہوسکتی ہیں۔ اس ضمن میں کئی پھل اور سبزیاں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ چکنی اور تیل والی مچھلیوں میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈز ہوتے ہیں۔ ان کا استعمال جوڑوں میں تکلیف اور سوزش کم کرتا ہے۔ ماہرین کہتے ہیں کہ ہفتے میں ایک یا دو مرتبہ ایسی مچھلی کھائی جائے جس میں چکنائیاں اور تیل موجود ہوں۔ ان میں میکریل، سامن اور ٹیونا (جو ڈبے میں بند نہ ہو) سرفہرست ہیں۔ مچھلی کھانے سے جوڑوں میں درد پیدا کرنے والا یورک ایسڈ کم ہوجاتا ہے۔ اگر مچھلی دستیاب نہ ہو تو اس ضمن میں مچھلی کے کیپسول لئے جاسکتے ہیں جو اومیگا تھری کیپسول بھی کہلاتے ہیں۔ روزانہ ایک گولی کھانے سے مریض کو بہت افاقہ ہوتا ہے۔ جوڑوں کا درد بڑھتے بڑھتے ہڈیوں کی شدید کمزوری کی جانب بڑھتا ہے اور مزید پیچیدگیاں پیدا کرتا ہے۔ اس کے بعد ہڈیوں میں ٹوٹ پھوٹ بھی بڑھ جاتی ہے۔ اس کا تدارک دودھ پی کر کیجئے۔ دودھ میں شامل کیلشیم اور دیگر مفید اجزا جوڑوں کے درد کو کم کرتے ہیں۔ اسی بنا پر لسی کا استعمال مفید رہے گا۔ جوڑوں کے مریض کا وزن عموماً زیادہ دیکھا گیا ۔ اس سے بدن کے ہر عضو پر دبائو بڑھتا ہے اور ماہرین کا اصرار ہے کہ گنٹھیا کے مریض اپنا وزن کم کریں۔ اس کے لئے غذائی احتیاط، ورزش اور دیگر احتیاطی تدابیر بہت مفید ثابت ہوتی ہیں۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟