25 ستمبر 2018
تازہ ترین
ملکی نظام چلانے کیلئے9 ارب ڈالر کی ضرورت

اسد عمر نے کہا ہے  کہ ملکی نظام چلانے کیلئے فوری طور پر 9 ارب ڈالر کی ضرورت ہے، آئی ایم ایف کے پاس جانے نہ جانے کا فیصلہ پارلیمنٹ کی مشاورت سے ہوگا۔ وفاقی وزیر خزانہ نے وقفہ سوالات کے دوران بتایا کہ پارلیمنٹ میں بحث کروانے کے بعد آئی ایم ایف کے پاس جانے یا نہ جانے سے متعلق فیصلہ کیا جائے گا۔ اسد عمر نے بتایا کہ حکومت نے گزشتہ 5 سال کے دوران 42.1 ارب ڈالرز قرضہ لیا اور 70 ارب ڈالرز کے رقم واپس کی، ایوان بالا کو بتایا گیا کہ گزشتہ چار سال کے دوران انکم ٹیکس کی مد میں 879 ارب روپے وصول کئے گئے۔ سال 2015 اور 16 کے درمیان 1027 ارب روپے جمع ہوئے۔ انہوں نے کہا کرنسی اسمگلنگ کی روک تھام کے لئے حکومت اقدامات کر رہی ہے، وزیراعظم نے ہنڈی کے ذریعے رقم کی منتقلی اور کرنسی اسمگلنگ کی روک تھام کے لئے اہم اجلاس طلب پیر کو طلب کیا ہے۔ اسد عمر نے کہا کہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس میں ہمیں گرے لسٹ میں اس لئے بھی ڈالا گیا ہے کہ حوالہ ہنڈی میں ہمارا نام ہے، ملائیشیا میں ہونے والے آئندہ اجلاس سے قبل اقدامات کر رہے ہیں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟