22 ستمبر 2018
تازہ ترین
  مقبوضہ کشمیر، 17شہید نوجوان کی نماز جنازہ ادا

مقبوضہ کشمیر میں  ضلع کپواڑہ میں شہید نوجوان مظفر احمد میر کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مظفر احمد کو بھارتی فورسز نے9اگست کو ضلع بارہمولہ کے علاقے رفیع آباد میں دیگر چارنوجوانوں کے ہمراہ شہید کرنے کے بعد غیر ملکی عسکریت پسند قراردےکر رفیع آبادکے جنگل میں دفن کیا تھا۔ تاہم جب مظفر احمدجو اپنی شہادت سے 3روز قبل گھر سے لاپتہ ہوگیاتھا، کی تصویر سوشل میڈیا پروائرل ہو گئی تولواحقین نے اسے پہنچان لیا۔ قبل ازیں مظفرکے اہلخانہ اس کی گمشدگی کی رپورٹ مقامی تھانے میں درج کرواچکے تھے۔ مظفرکے اہلخانہ نے پولیس سے رابطہ کر کے اپنے پیارے کا جسد خاکی حوالے کرنے کا مطالبہ کیا ۔ جسدخاکی حوالے کرنے کے مطالبے پر زور دینے کے لئے لنگیٹ میں تین  روز تک ہڑتال بھی کی گئی اور بالآخر قابض انتظامیہ نے مجبور ہو کر17روز بعد قبر کشائی کرکے شہید کی میت لواحقین کے حوالے کر دی۔ شہید کو آزادی کے حق میں اور بھارت کے خلاف نعروں کی گونج میں لنگیٹ میں اپنے آبائی قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا ۔ ان کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی ۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟