22 اکتوبر 2019
تازہ ترین
 مغربی پالیسیاں دہشتگردی بڑھانے کا باعث ، خواجہ آصف  

 مغربی پالیسیاں دہشتگردی بڑھانے کا باعث ، خواجہ آصف  

وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ مغرب کی الگ تھلگ رکھنے کی پالیسیاں دہشت گردی کےخلاف جنگ میں معاون نہیں بلکہ اس کے بڑھاوے کا سبب بنیں گی۔میونخ میں سیکورٹی کانفرنس کے دوران انسداد انتہاپسندی اوردہشت گردی کے موضوع پر پینل مباحثے میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے ہاتھوں مارے گئے 90 فیصد سے زائد افراد مسلمان ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف لڑائی مشترکہ جنگ ہے، دہشت گردی کسی مذہب سے منسلک نہیں ،ہم دہشت گردی کےخلاف جنگ کے عزم پرقائم ہیں،وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان میں فرنٹ لائن سٹیٹ کا کردار ادا کیا اور اس میں سب سے زیادہ قربانیاں دی،انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کسی ایک ملک کا مسئلہ نہیں بلکہ یہ ایک عالمی چیلنج ہے جس سے نمٹنے کے لئے مشترکہ حکمت عملی اپنا نا ہوگی ،انہوں نے کہا کہ مغرب کی دہشت گردی کے حوالے سے پالیسیاں مسائل پیدا کررہی ہیں اس سے دہشت گردی ختم نہیں بلکہ بڑھے گی ،وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ  دہشت گردی ایک ناسور ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ دنیا میں موجود مسائل کے حل کے لئے بھی اقدامات اٹھائے جانے چاہئیں ،پاکستان پڑوسی ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات کا خواہاں ہے ،انہوں نے کہا کہ حالیہ بم دھماکوں میں بیرونی عناصر بھی ملوث تھے ،عالمی برادری کو اس کا نوٹس لینا چاہیے ۔ 


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟