17 نومبر 2018
مشینری اور خوراک کی درآمد میں 21فیصد اضافہ

 رواں مالی سال 2016-17ئ کی پہلی ششماہی تیل ، مشینری اور خوراک کی درآمد میں 21فیصد اضافہ ہوا۔ اس عرصہ مشینری کی درآمد میں 41فیصد سے 3.67بلین ڈالر اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ پاکستان کے قومی شماریاتی بیورو کے مطابق رواں سال کی پہلی ششماہی جولائی تا دسمبر کے دوران تیل ، مشینری اور خوراک کی درآمدات کل درآمدات میں 55.4فیصد کی  حصہ دار رہیں۔ سال 2015ئ میں کل درآمدات کا 50.2فیصد تیل ، مشینری اور خوراک کی درآمد پر مشتمل تھا۔ بیورو کے مطابق مشینری کی کل درآمد میں ٹیکسٹائل مشینری کی درآمد 11.3فیصد ، تعمیراتی مشینری کی درآمد 55فیصد اور الیکٹریکل مشینری کی درآمد 7.8فیصد رہی البتہ ٹیلی کام سیکٹر کی مشینری کی درآمد میں 5فیصد کمی آئی جس کی وجہ موبائل فونز اور دوسرے آلات پر درآمدی ڈیوٹی میں اضافہ ہوا۔ پٹرولیم پراڈکٹس کی درآمد میں جولائی تا دسمبر 2016ئ کے دوران 18.5فیصد سے 3.205بلین ڈالر اضافہ رہا البتہ خام تیل کی درآمد میں 21.7فیصد اور مائع پٹرولیم گیس کی درآمد میں 49.3فیصد اضافہ ہوا۔ خوراک ٟفوڈ کموڈیٹیزٞ کی درآمد میں 9فیصد اضافے کے ساتھ 2.864بلین ڈالر رہی جن میں 844.28ملین کا پام آئل 371.23ملین ڈالر کی دالیں رہیں۔ دودھ اور خشک میوہ جات کی درآمد میں بھی اضافہ ہوا۔ 


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟