21 جولائی 2019
تازہ ترین
مشیر تجارت نے پاکستان کو ’’کنگلا ملک‘‘ قرار دے دیا

مشیر تجارت نے پاکستان کو ’’کنگلا ملک‘‘ قرار دے دیا

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیدوار کے اجلاس میں مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد نے پاکستان کو ’’کنگلا ملک‘‘ قرار دے دیا۔سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کا اجلاس ہوا جس میں چیف فنانشل آفیسر نے پاکستان اسٹیل مل کی صورتحال پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اسٹیل ملز کے ذمہ نیشنل بینک کا 36.5 ارب روپے کا قرضہ ہے اور قرضے پر سالانہ 4.5 ارب روپے سود ادا کرنا پڑتا ہے، اسٹیل ملز کا یومیہ نقصان 4 کروڑ روپے ہے جب کہ تنخواہوں کی مد میں ماہانہ 55 کروڑ روپے کے اخراجات ہیں اور اسٹیل مل ملازمین کی تعداد 10 ہزار سے زیادہ ہے۔ اس موقع پر مشیر صنعت و تجارت عبد الرزاق داؤد نے کہا کہ اسٹیل ملز دیانت داری سے چلائی جاتی تو یہ ملک کا بہترین اثاثہ ہوتا، بدقسمتی سے ایسا نہیں ہوا، اسٹیل ملز میں کرپشن شروع ہوئی، اسے بند کردیا گیا، اسٹیل ملز کا یہ حال دیکھ کر خون جلتا ہے، گزشتہ 5 سال کے دوران اسٹیل ملز کی کوئی دیکھ بحال نہیں کی گئی۔ بعد ازاں انہوں نے کہا کہ پاکستان ’’کنگلا ملک‘‘ ہے۔ مشیرتجارت عبد الرزاق داوٴد کے بیان پر اجلاس میں گرما گرمی ہوگئی۔ چیئرمین پاکستان اسٹیل انڈسٹری نے کہا کہ پاکستان کنگلا ملک نہیں ہے، اپنےالفاظ واپس لیں۔ اراکین نے بھی ان سے اصرار کیا کہ آپ اپنے الفاظ واپس لیں جس پر مشیر صنعت و تجارت عبد الرزاق داؤد نے  اپنے الفاظ واپس لے لیے۔ ۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟