15 نومبر 2018
مسافر کے ساتھ ساتھ چلنے والا سوٹ کیس

 کئی مرحلہ وار سفر اور لمبی فلائٹوں میں سوٹ کیس کو گھسیٹتے ہوئے سخت الجھن ہوتی ہے جس کا حل ایک چینی سٹارٹ اپ کمپنی نے موبائل سوٹ کیس کی صورت میں نکالا ہے۔ فارورڈ ایکس نامی کمپنی نے ایک ذہین سوٹ کیس تیار کیا ، جسے اووس کا نام دیا گیا ۔ اس میں کئی ویڈیو کیمرے، پہیوں کو گھمانے والی دو موٹرین اور طاقتور کمپیوٹر چپ لگی ہے جو کمپیوٹر وږن کے تحت اطراف کا جائزہ لیتی ہے۔ اس کے علاوہ گم ہوجانے کی صورت میں اسے جی پی ایس نظام کے تحت تلاش بھی کیا جاسکتا ہے۔ طاقتور موٹروں کے بدولت سوٹ کیس مناسب رفتار سے آپ کے دائیں یا بائیں جانب خاموشی سے چلتا رہتا ہے۔ کیمروں اور الگورتھم کی بدولت سوٹ کیس کسی چھوٹے بچے کی طرح اپنے مالک پر نظر رکھ کر اس کے ساتھ دوڑتا ہے جس کی زیادہ سے زیادہ رفتار 10 کلومیٹر فی گھنٹہ ہے۔ خالی حالت میں اس کاوزن ساڑھے چار کلوگرام ہے اور مکمل طور پر واٹر پروف ہے۔ اس کی ایک اور خاص بات یہ ہے کہ اس سے آپ اپنا سمارٹ فون اور چھوٹے برقی آلات بھی چارج کر سکتے ہیں۔ سوٹ کیس مصنوعی ذہانت کے ذریعے رکاوٹوں مثلاً لوگوں اور میز کرسیوں سے بچتا ہوا اپنے آقا کے پیچھے دوڑتا رہتا ہے۔ چار گھنٹے تک چارج ہونے پر یہ 20 کلومیٹر کا سفر طے کرسکتا ہے۔ سوٹ کیس کو فون ایپ کے ذریعے بھی کنٹرول کیا جاسکتا ہے۔ اس میں 96 ڈبلیو ایچ کی لیتھیئم آئن بیٹری ہے جسے الگ کیا جاسکتا ہے۔ امریکی کسٹم ٹی ایس اے اور دیگر اداروں کی جانب سے سوٹ کیس کی بین الاقوامی سفر کا سرٹیفکیٹ مل چکا ہے۔ اووس کی تعارفی قیمت 800 ڈالر ہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟