24 ستمبر 2018
تازہ ترین
 غذائی عادات کو جانچنے کیلئے بلڈ ٹیسٹ ایجاد

 سائنسدان مریضوں کی غذائی عادات کو جانچنے کے لئے ایک سادہ سا بلڈ ٹیسٹ ایجاد کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ مریضوں کے علاج میں سب سے زیادہ اہمیت کا حامل عمل معالج کی ہدایت پر مکمل طور پر عمل کرتے ہوئے غذائی عادات میں تبدیلی لانا ہے۔ معالجین کی ہدایت پر چٹ پٹے اور ذائقہ دار کھانوں سے خود کو روکے رکھنا مریضوں کے لئے نہایت مشکل کام ہوتا ہے، اس لئے عمومی طور پر مریض اپنے معالج سے غذائی پرہیز سے متعلق جھوٹ بولتے ہیں۔ تاہم اب طبی ماہرین نے مریضوں کے اس جھوٹ کو پکڑنے کے لئے ایک سادہ سا بلڈ ٹیسٹ ایجاد کرلیا۔ جان ہوپکنز یونیورسٹی کے سائنس دانوں نے خون کا ایک ایسا سادہ ٹیسٹ دریافت کیا ، جس کے ذریعے ڈاکٹرز کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے خوراک لینے والے اور معالج کی ہدایت کے برخلاف غذائی چارٹ پر عمل پیرا نہ ہونے والے مریضوں کے درمیان فرق جانچا جاسکے گا۔ اس ٹیسٹ سے معالجین بآسانی پتا چلا لیں گے کہ مریض ان کی بتائی ہوئی غذائی احتیاطوں پر عمل پیرا ہیں یا ابھی تک اپنی غذائی عادات پر قابو نہیں پا سکے ہیں۔ اس ٹیسٹ کے ذریعے مریضوں کے خون میں موجود غذائی ذرات کو جانچا جاسکے گا اور ان کی مقدار کا بھی اندازہ لگایا جا سکے گا، اسی طرح معالجین مریض کی کیلوریز پر بھی نظر رکھ سکیں گے۔ یہ ٹیسٹ بالخصوص ماہرین غذائیت (Nutritionist) کے لئے کارگر ثابت ہوگا۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟