16 نومبر 2018
تازہ ترین
عارف علوی، اعتزاز اور مولانا فضل کے صدارتی انتخاب کیلئے کاغذات جمع

 اپوزیشن اتحاد مشترکہ صدارتی امیدوار لانے میں ناکام رہا، تحریک انصاف کے عارف علوی، پیپلز پارٹی کے اعتزاز احسن اور اپوزیشن کی دیگر جماعتوں  کے  امیدوار مولانا فضل الرحمان نے کاغذات نامزدگی جمع کرا دیئے۔ ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی نے مولانا فضل الرحمان کو اپوزیشن کی جانب سے مشترکہ امیدوار بنانے کی مخالفت کی، جبکہ دیگر جماعتوں نے مولانا فضل الرحمان کو اپوزیشن اتحاد کا مشترکہ صدارتی امیدوار نامزد کیا۔ مولانا فضل الرحمان کی جانب سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپنے  کاغذات نامزدگی جمع کرائے گئے۔ دوسری جانب پیپلز پارٹی کے نامزد صدارتی امیدوار اعتزاز احسن نے اپنے کاغذات نامزدگی اسلام آباد ہائیکورٹ میں جمع کرا دیئے، اعتزاز احسن کی جانب سے خورشید شاہ تجویز کنندہ اور شیری رحمان تائید کنندہ ہیں۔ اسلام آباد ہائیکورٹ آمد کے موقع پر اعتزاز احسن کے ہمراہ قمر زمان کائرہ، سید نوید قمر، شیری رحمان اور خورشید شاہ سمیت دیگر بھی تھے۔  صدر کے عہدے کے لئے تحریک انصاف کی جانب سے نامزد ڈاکٹر عارف علوی کے کاغذات نامزدگی سندھ ہائیکورٹ اور اسلام آباد ہائیکورٹ میں جمع کرائے گئے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ میں عارف علوی نے تجویز کنندہ اور تائید کنندہ کے لئے 4 فارمز جمع کرائے، شبلی فراز، صداقت عباسی، فرخ حبیب اور انوار الحق کاکڑ تائید کنندگان میں شامل ہیں ،جبکہ ڈپٹی سپیکر قاسم خان سوری، ملکہ علی بخاری اور عامر ڈوگر کے فارم بھی جمع کرائے گئے۔ دوسری جانب صدر کے عہدے کے لئے پی ٹی آئی رہنما خرم شیر زمان اور دیگر نے سندھ ہائیکورٹ میں ڈاکٹر عارف علوی کے کاغذات نامزدگی جمع کرائے۔  واضح رہے کہ صدارتی انتخاب میں حصہ لینے کے لئے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کا آج آخری روز ہے اور 4 ستمبر کو نئے صدر کے لئے پارلیمنٹ اور چاروں صوبائی اسمبلیوں میں ووٹنگ ہوگی۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟