21 ستمبر 2018
تازہ ترین
صدارتی ووٹ مانگنے نواز کے پاس جیل جانے کو بھی تیار تھے، کائرہ

 پیپلز پارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ  نے کہا ہے کہ اپنے صدارتی امیدوار کے لئے ووٹ مانگنے نواز شریف کے پاس جیل جانے کو بھی تیار تھے۔ لاہور میں خورشید شاہ اور اعتزاز احسن کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے قمر زمان کائرہ نے کہا کہ سیاسی سفر میں معافیاں نہیں مانگی جاتیں، اگر معافی مانگنے کی روایت چلی تو پیپلز پارٹی سے ہر جماعت کو معافی مانگنی پڑے گی۔ انہوں نے کہا کہ صدارتی امیدوار اعتزاز احسن کے ساتھ لاہور آئے ہیں جہاں مختلف ارکان اسمبلی سے ملاقاتیں کریں گے، اعتزاز احسن سے بہتر صدارتی امیدوار نہیں ہوسکتا۔ انہوں نے کہا کہ صدر کا عہدہ اب بڑے اختیارات کا حامل نہیں اور مولانا فضل الرحمان نے خفت مٹانے والی بات کی ، تاہم اعتزاز احسن کے صدر بننے سے اس عہدے کے اختیارات اہمیت اختیار کر جائیں گے اور اگر وہ صدر ہوں گے تو اس عہدے کو چار چاند لگ جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اعتزاز احسن ہر دور کے آمر کے خلاف لڑے ہیں، توقع تھی سب اعتزاز احسن کے نام پر متفق ہوجائیں گے۔  اعتزاز احسن نے کہا کہ شہباز شریف کی خواہش تھی ہم نواز شریف سے مل لیں لیکن ملاقات نہ ہوسکی اور ہم اپنے امیدوار کے لئے ووٹ مانگنے جیل میں نواز شریف کے پاس جانے کو بھی تیار تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے ایک دوسرے کے خلاف الیکشن لڑا ، تاہم اب اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ ایشوز پر اکٹھے بھی ہوں گے، ہمیں صدارتی الیکشن لڑنا ہے اور لڑیں گے، کوشش ہے کہ مولانا فضل الرحمان ہماری بات مان لیں اور وہ بات مان گئے،  تو ہم الیکشن جیت لیں گے۔  


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟