19 دسمبر 2018
تازہ ترین
شہباز شریف کی گرفتاری، اپوزیشن کا پارلیمنٹ  کے باہر احتجاج

شہباز شریف کی گرفتاری پر آج پھر قومی اسمبلی کے باہر مسلم لیگ ن کا احتجاج جاری ہے ، رہنمائوں کا نیب پر انتقامی کارروائی کا الزام، وزیراعظم عمران خان کو بچہ بچونگڑا قرار دے دیا۔ تفصیلات کے مطابق، اپوزیشن کے دھرنے میں پیپلز پارٹی کے ارکان شامل نہیں ہیں۔ گزشتہ روز بھی شہباز شریف کی گرفتاری اور پنجاب اسمبلی کا اجلاس نہ بلانے پر صوبائی اسمبلی کے باہر ن لیگ کے کارکنوں نے شدید احتجاج کیا ، جبکہ مرکزی گیٹ خار دار تاریں لگا کر بند کر دیا گیا تھا۔ گیٹ نہ کھلنے پر اراکین پنجاب اسمبلی نے گیٹ کے سامنے دریاں بچھا لیں اور زمین پر بیٹھ گئے۔ اس موقع پر ارکان کی جانب سے پارٹی قیادت کے حق میں نعرے بازی بھی کی گئی۔ اس موقع پر مریم اورنگزیب نے کہا کہ راستے بند کرنا اور ارکان کو روکنا حکومت کی گھبراہٹ اور غیر جمہوری رویے کا ثبوت ہے، کسی بھی منفی صورتحال کی ذمہ دار ی سپیکر پنجاب اسمبلی اور حکومت پر عائد ہوگی۔ واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی نے پارٹی صدر میاں شہباز شریف کی گرفتاری کیخلاف قومی اور پنجاب اسمبلی کا اجلاس فوری طور پر طلب کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟