16 اکتوبر 2019
تازہ ترین
شاہانہ سفر

شاہانہ سفر

 خلیجی عرب ممالک میں شاہی خاندانوں کے افراد سال میں کم از کم ایک سے دو مرتبہ اپنے پالتو عقابوں کے ساتھ مسافر بردار طیاروں میں سفر کرتے دکھائی دیتے ہیں اور خصوصاً جب وہ شکار پر جارہے ہوتے ہیں۔چار سال پہلے بھی ایسی ہی ایک تصویر سوشل میڈیا پر مقبول ہوچکی ہے جس میں عرب شیوخ کے ساتھ درجنوں عقاب ایک مسافر بردار طیارے میں دکھائی دے رہے تھے۔عرب ممالک میں عقاب پالنا اور شکار کھیلنا بلند سماجی رتبے کی علامت سمجھا جاتا ہے اور اسی لیے خلیجی ممالک کی بیشتر ہواباز کمپنیاں مالدار عرب شیوخ اور عرب شہزادوں کے پالتو عقابوں کے لیے خصوصی انتظامات کرتی ہیں۔دلچسپی کی بات یہ ہے کہ متحدہ عرب امارات میں عقابوں کے لیے پاسپورٹ تک بنوائے جاتے ہیں تاکہ وہ اپنے مالک کے ساتھ بین الاقوامی سفر بھی کرسکیں۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟