15 نومبر 2018
تازہ ترین
زمین سے ٹکرانے والا روشن ترین ریڈیائی اشارہ

خلا میں نظر آنے والی مختلف کہکشائیں مختلف شکل و صورت و کیفیات کی حامل نظر آتی ہیں۔ ان میں سے کوئیسر نامی کہکشاں بطور خاص زیادہ مشہور ہے کیونکہ اس کے مرکز میں انتہائی بڑے بڑے سیاہ غار بنے نظر آتے ہیں۔ ان کہکشائوں کو فلکیات کے ماہرین کوئیسرز کا نام دیتے ہیں اور یہ کرہ ارض سے تقریباً13ارب نوری سال کے فاصلے پر ہے۔ ماہرین فلکیات کے مطابق اس سے خارج ہونے والی ریڈیائی لہریں کرہ ارض تک پہنچنے والی سب سے زیادہ روشن اشارے قرار دیئے جارہے ہیں اور انکا وجود اس زمانے سے چلا آرہا ہے جب اس دنیا کی عمر صرف ایک ارب سال تھی۔ یہ سیاہ غار انتہائی بڑی مقدار اور پیمانے پر الیکٹرو میگنیٹک تابکاری خارج کرنے کے حوالے سے بھی جانے جاتے ہیں اور اگر روشنی کی حد کا اندازہ لگایا جائے تو اس کی مجموعی روشنی سورج کی روشنی سے بھی زیادہ ہے۔ اسے دیکھنے کیلئے خاص قسم کی دوربینوں کی ضرورت ہے۔ جسے ماہرین فلکیات اب بھی بہتر سے بہتر بنانے کیلئے کوششیں کر رہے ہیں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟