روئی درآمدات پر 5فیصد سیلز ٹیکس کا فیصلہ  

مانیٹرنگ ڈیسک وفاقی حکومت نے سے روئی کی درآمد پر 5 فیصد کسٹم ڈیوٹی نافذ کرنے کے بعد 5 فیصد سیلز ٹیکس عائد کرنے کا فیصلہ بھی کرلیا  ۔  چیئرمین کاٹن جنرز فورم احسان الحق نے   بتایا کہ ایف بی آر نے تقریباً ایک ہفتے قبل روئی کی درآمد پر 5 فیصد کسٹم ڈیوٹی عائد کی تھی جس سے پہلے ہی ٹیکسٹائل انڈسٹری میں تشویش کی لہر دیکھی جارہی تھی کہ اب ہفتے بعد ہی ایف بی آر نے 15 جولائی سے روئی کی درآمد پر 5 فیصد سیلز ٹیکس عائد کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے حالانکہ ایف بی آر کا یہ فیصلہ نگراں وفاقی وزیرخزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر کے اس بیان سے متصادم ہے جس میں انہوں واضح طور پر کہا تھا کہ نگراں حکومت کوئی نیا ٹیکس عائد نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کے تازہ ترین اقدام کے باعث آلودگی سے پاک اور لمبے ریشے والی روئی کی درآمدات محدود ہوجائیں گی جس سے ملک میں تیار ہونے والی کاٹن کی ویلیو ایڈڈ مصنوعات کی برآمدات میں بھی کمی کے خدشات پیدا ہوجائیں گے اور روپے کی قدر میں حالیہ کمی کے ملکی برآمدات پر مثبت ثمرات کا حصول بھی ناممکن ہوجائے گا  لہٰذا اس موقع پر روئی کی درآمد پر درآمدی ڈیوٹیز کا بظاہر کوئی جواز نہیں تھا  ۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟