15 نومبر 2018
 دشمن کودھوکہ  دینے کیلئے جعلی ٹینک تیار

 برطانوی افواج نے پھلائے جانے والے جعلی ٹینک اور جنگی طیاروں کے ماڈل تیار کئے ہیں جن کے ذریعے دشمن کے سیٹلائٹ اور ڈرون کو جنگی میدان میں دھوکہ دیا جاسکتا ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ برطانوی افواج کے پاس مناسب عسکری ہتھیاروں کی کمی ہے۔ اس بات کا اندازہ یوں لگایئے کہ برطانیہ کے پاس صرف 227 پرانے چیلنجر ٹو ٹینک ہیں اور 2010 میں دفاعی بجٹ میں تاریخی کمی سے یہ صورتحال مزید خراب ہوئی جبکہ دوسری جانب روس کے پاس جدید ترین ٹینکوں کی تعداد 2700 سے بھی زیادہ ہے۔ حال ہی میں 65 سینئر برطانوی فوجی افسران نے 2035 تک برطانیہ کی جنگی اور عسکری ضروریات پر مفصل جائزہ پیش کیا ۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ شہری علاقوں میں تنازعات اور جنگوں کے لئے برطانیہ کو غیر معمولی تعداد میں سپاہی درکار ہوں گے، آج برطانوی افواج سکڑ کر صرف 77 ہزار تک پہنچ چکی ہے۔ اس تناظر میں ایک فوجی افسر وینڈی ایگل نے کہا ہے کہ برطانوی رائل افواج کو دھوکہ اور حیلہ پر انحصار کرنا ہوگا تاکہ دشمن طویل وقت تک جعلی ٹینکوں اور طیاروں میں الجھا رہے اور جعلی ٹینکوں کو دشمن پر رعب اور دبدبے کے لئے بھی رکھا جاسکتا ہے۔ وینڈی ایگل نے کہا ہے کہ جعلی غبارہ ٹینک حرارت بھی خارج کرتے ہیں جس سے دشمن کا تھرمل نظام دھوکا کھا کر اسے اصلی گمان کرے گا اس کے علاوہ موبائل ٹرانسمیٹر سے جعلی سگنلز بھی خارج کئے جائیں گے۔ ایک غبارہ ٹینک کا وزن صرف 100 کلو گرام ہے اور اسے چند سپاہی مل کر تیار کرکے رکھ سکتے ہیں۔ برطانوی افواج نے اس کے  ساتھ جعلی جنگی طیارے بھی بنائے ہیں۔ واضح رہے کہ دوسری عالمی جنگ میں جعلی ٹینک استعمال کئے گئے تھے اور دیگر جنگوں میں بھی ان کی افادیت سامنے آئی ہے، کچھ ایسے ہی ہتھیار روس کے پاس بھی موجود ہیں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟