15 نومبر 2018
تازہ ترین
خصوصی کمیٹی کا دبئی میں موجود پاکستانیوں  کے اثاثے واپس لانے کا فیصلہ

 بیرون ملک سے پاکستانیوں کے اثاثے واپس لانے کیلئے قائم خصوصی کمیٹی نے پہلے مرحلے میں دبئی میں موجود اثاثے واپس لانے کا فیصلہ کیا ہے لوٹی گئی قومی دولت بیرون ملک سے واپس لانے اور خفیہ اثاثے رکھنے والے پاکستانیوں کے خلاف کارروائی کیلیے سپریم کورٹ کی قائم کردہ خصوصی کمیٹی نے رپورٹ مرتب کرلی ہے۔ سب سے پہلے دبئی سے پاکستانیوں کے اثاثوں کو وطن واپس لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ایف آئی اے، ایف بی آر اور نیب پر مشتمل جوائنٹ ٹاسک فورس کی رپورٹ کے مطابق ایف آئی اے کے پاس متحدہ عرب امارات میں پاکستانیوں کے اثاثوں کے حوالے سے کافی معلومات ہیں۔ اس لیے کمیٹی سب سے پہلے دبئی سے پاکستانیوں کے اثاثے واپس لانے پر کام کرے گی۔ پاکستانیوں کے برطانیہ میں موجود اثاثے واپس لانے کے لیے بھی ایف بی آر کے پاس معلومات کا جائزہ لیا جائے گا۔ جوائنٹ ٹاسک فورس بیرون ملک اثاثے رکھنے والوں کو پیش ہونے کا حکم دے گی جن سے غیر ملکی اثاثوں کے متعلق وضاحت اور بیان حلفی طلب کیا جائے گا۔ جے ٹی ایف میں پیش نہ ہونے والوں کے نام مناسب اقدامات کے لیئے سپریم کورٹ کے سامنے پیش کیے جائیں گے۔ کمیٹی میں غیر ملکی اثاثوں کی ملکیت تسلیم کرنے والوں سے منی ٹریل کی وضاحت مانگی جائے گی۔ منی ٹریل پیش نہ کرنے پر قانون نافذ کرنے والے ادارے اثاثوں کی ضبطی کی کارروائی کریں گے کمیٹی اپنی رپورٹ ہر ماہ سپریم کورٹ میں پیش کرے گی۔

 

 


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟