22 اکتوبر 2019
تازہ ترین
حکومت نے کھاد سبسڈی کی دوسری قسط جاری کر دی

حکومت نے کھاد سبسڈی کی دوسری قسط جاری کر دی

 وفاقی حکومت کی جانب سے رواں مالی سال کے بجٹ میں فرٹیلائزر سیکٹر کے لیے سبسڈی کی مد میں مختص کی گئی رقم کی دوسری قسط جاری کر دی گئی، اس اقدام سے یوریا اور فاسفیٹ سمیت کھاد کی مختلف اقسام کی قیمتوں میں کمی متوقع ہے۔فرٹیلائزر سیکٹر نے سبسڈی کی مد میں دوسری قسط کی ادائیگی کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے وزارت قومی غذائی تحفظ وتحقیق کی سبسڈی کی تقسیم کے سسٹم میں بہتری لانے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ سبسڈی کی ادائیگی میں تاخیر سے بچا اور فرٹیلائزر کے پیداواری عمل میں تسلسل کو برقرار رکھا جاسکے۔فرٹیلائزر سیکٹر کا کہنا ہے کہ وزارت کی جانب سے سبسڈی کی ادائیگی کے لیے نیشنل فرٹیلائزر ڈیولپمنٹ سینٹر پر دستیاب اور کمپنیوں کی جانب سے فراہم کردہ ڈیٹا کے بجائے صوبوں سے کھاد کی فروخت کی تصدیق کی جاتی ہے جبکہ ابھی تک صوبہ پنجاب کے علاوہ  دیگر صوبوں میں فروخت کردہ کھاد کی تصدیق کا عمل مکمل ہونا باقی ہے، کمپنیاں روزانہ کی بنیادپر اپنی سیلز رپورٹ صوبائی ایگریکلچرل ڈپارٹمنٹ کو ارسال کرتی ہیں۔یاد رہے کہ وفاقی حکومت نے رواں مالی سال کے بجٹ میں فرٹیلائزر سیکٹر کے لیے سبسڈی کی مد میں27ارب روپے مختص کیے تھے جبکہ سبسڈی کی اس رقم کے علاوہ فرٹیلائزر پر عائد جی ایس ٹی کی شرح کو بھی 17 فیصد سے کم کرکے 5 فیصد کردیا گیا تھا جس کے فوری بعد مینوفیکچررز نے یوریا بیگ کی قیمتوں میں 50روپے فی بیگ کی کمی کردی تھی جس کے بعد بجٹ میں فرٹیلائزر سیکٹر کے لیے سبسڈی کی مد میں مختص رقم میں سے 6ارب روپے کی پہلی قسط بجٹ کے فوری بعد ادا کر دی گئی تھی جبکہ باقی 21ارب روپے کی کلیم کردہ رقم میں سے ساڑھے6ارب روپے کی دوسری قسط وفاقی وزارت قومی غذائی تحفظ وتحقیق کی جانب سے تقریباً 8ماہ بعد ادا کی گئی ہے۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟