13 نومبر 2018
تازہ ترین
جدید ترین موبائل  چپس کی جنگ

ایک ارب ڈالر ہرجانے کا مقدمہ کر دیا۔  خبر  کے مطابق چند روز قبل امریکی حکومت نے چِپ بنانے والی کمپنی کوالکوم پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ اس شعبے میں اپنی اجارہ داری قائم رکھنے کے لیے مسابقت مخالف حکمت عملیاں اپنائی ہوئی ہے۔ واضح رہے کہ کوالکوم ایپل اور سام سنگ کو جدید ترین چپس فراہم کرتی ہے جو موبائل فونز کو وائرلیس نیٹ ورک سے منسلک ہونے میں مدد فراہم کرتے ہیں۔ حالیہ مالی سال کے دوران کوالکوم کی آمدنی 23.5 ارب ڈالر رہی اور اس میں ان دونوں کمپنیوں کا حصہ تقریباً 40 فیصد تھا۔ ایپل کی جانب سے کیلی فورنیا کے جنوبی ضلع کی ضلعی عدالت میں مقدمہ دائر کیا گیا ہے جس کے مطابق کوالکوم پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ وہ مہنگی چپس فروخت کر رہی ہے اور طے شدہ 1 ارب ڈالر کی ادائیگی سے بھی گریزاں ہے۔ دوسری جانب کوالکوم کے وکیل ڈان روزین برگ نے ایپل کی جانب سے عائد کیے جانے والے الزامات کو بے بنیاد قرار دے دیا ہے۔ ایپل نے اپنی درخواست میں یہ بھی الزام لگایا ہے کہ کوالکوم دیگر مینوفیکچررز کو لائسنس جاری کرنے سے انکار کر رہی ہے تاکہ دیگر کمپنیاں چپس نہ بنا سکیں اور اس کی اجارہ داری قائم رہے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟