23 ستمبر 2018
تازہ ترین
ثانیہ کو ڈراموں میں عورت کے منفی کردارپراعترض

 اداکارہ ثانیہ سعید نے کہا ہے کہ ڈرامہ کوئی دھمکی یا بحث نہیں ہے، بس یہ تو لوگوں کو سوچنے کا انداز بتاتا ہے۔ نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے ثانیہ سعید نے کہا کہ مجھے ٹی وی ڈراموں میں عورت کو بطور ولن پیش کرنے پر سخت اعتراض ہے۔ ایسا نہیں ہوتا، کیونکہ ایک عورت کیا ہر وقت عام زندگی میں منفی کردار ہی ادا کرتی رہتی ہے۔ اس لئے مجھے ایسے ڈراموں میں کام کرنے کا کوئی شوق نہیں۔ اگر دیکھا جائے تو جو خواتین پروفیشنل لائف گزارتی ہیں، وہ اپنی زندگی کے لئے بہتر فیصلے لیتی نظر آتی ہیں۔ ثانیہ سعید نے کہا کہ اگر ہم ان خواتین کی بات کریں جو بطور ہائوس وائف اپنی تمام عمر خاندان کی خدمت کے لئے وقف کرتی ہیں، کیا وہ کوئی آسان کام ہے۔ وہ تو24گھنٹے نوکری پر رہتی ہے۔ اس کے باوجود جب ڈراموں میں خواتین کی شخصیت کو منفی پیش کیا جاتا ہے تو بے حد برا لگتا ہے۔ اسی لئے میں ایسے کرداروں کوسائن کرنے سے صاف انکار کرتی ہوں کیونکہ میں جانتی ہوں کہ خواتین ایسی نہیں ہوتیں۔ انہوں نے کہا کہ میں میوزک بہت پسند کرتی ہوں اور ہر طرح کا میوزک سنتی ہوں۔ میں سمجھتی ہوں کہ میوزک سن کر ہم ساری دنیا کی سیر کر سکتے ہیں۔ دنیا بھر میں لوگوں نے اس خوبصورتی سے میوزک تخلیق کیا ہے کہ اس کو سن کر او رمحسوس کرکے ہم ان کے کلچر کو جان پاتے ہیں۔ اس لئے میرے نزدیک تو میوزک اور رقص کو خاص مقام حاصل ہے، میں ان دونوں شعبوں سے بہت محظوظ ہوتی ہوں۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟