بوکو حرام کا چاڈ کے گاؤں پر حملہ، 18 افراد ہلاک،عورتیں اغوا

 مغربی چاڈ کے علاقے میں بوکوحرام سے تعلق رکھنے والے مبینہ عسکریت پسندوں نے 18 کاشت کاروں کو ہلاک کرنے کے بعد 9 عورتوں کو اغوا کرکے اپنے ساتھ لے گئے ہیں ۔حکام کے مطابق تازہ ترین واقعہ تشدد کی اس لہر کا حصہ ہے جو ہمسایہ ملک نائیجیریا سے خطے بھر میں پھیلی ہوئی ہے۔ گزشتہ ہفتے رات گئے جھیل چاڈ کے علاقے کے ایک گاؤں میروم میں گھس آئے اور کسانوں کے گلے کاٹ دیے۔علاقائی گورنر محمد عبالی صالح نے کہا  کہ حملہ آور 9 عورتوں کو اٹھاکر اپنے ساتھ لے گئے،تاہم ان میں ایک ان کے چنگل سے بھاگ نکلنے میں کامیاب ہوگئی۔ کسان نئی ذرخیز زمینوں کی تلاش میں اس علاقے سے باہر نکل گئے جس کے متعلق سیکیورٹی فورسز نے غیر محفوظ قرار دیا تھا۔ یہی وجہ ہے کہ وہ حملے کا نشانہ بن گئے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟