26 ستمبر 2018
تازہ ترین
بنگلا دیشی و روہنگیا مسلمان کیڑے مکوڑے ہیں،رہنما بی جے پی

بھارتیہ جنتا پارٹی کے رکن پارلیمنٹ راجہ سنگھ نے کہا ہے کہ بنگلا دیشی اور روہنگیا مسلمان کیڑے مکوڑے ہیں اگر یہ اپنے وطن واپس نہیں جاتے تو انہیں گولی مار کر ہلاک کر دینا چاہیے۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق بھارتیہ جنتا پارٹی کے تلنگانہ اسمبلی سے رکن اسمبلی راجہ سنگھ نے کہا ہے کہ روہنگیا مسلمانوں اور بنگلا دیشی تارکین وطن کو فوری طور پر بھارت سے بے دخل کر دینا چاہیے اور اگر وہ نہیں جائیں تو انہیں دیکھتے ہی گولی مار دینی چاہیے۔ انتہا پسند ہندو نظریات رکھنے والے رکن اسمبلی راجہ سنگھ نے اپنے بیان میں کہا کہ ہزاروں بنگلا دیشی اور روہنگیا مسلمان غیر قانونی طور پر بھارت میں رہ رہے ہیں اب انہیں واپس ان کے ملک بھیج دینا چاہیے، بھارت میں ایسے کیڑے مکوڑوں کے لیے کوئی جگہ نہیں ۔ راجہ سنگھ نے مسلمان تارکین وطن کے حوالے نفرت آمیز بیان اس وقت جاری کیا جب تلنگانہ اسمبلی میں اس مسئلے پر بحث جاری تھی۔ اپنے بیان میں انہوں نے دعوی کیا کہ روہنگیا اور بنگلا دیشی تارکین وطن کی آبادکاری میں آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے اراکین اسمبلی ملوث ہیں۔ واضح رہے کہ مودی حکومت میں اقلیتوں کو خصوصی طور پر نشانہ بنایا جا رہا ہے اور غیر قانونی تارکین وطن ہونے کا الزام لگاکر انہیں بے دخل کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں جب کہ حال ہی میں بھارتی ریاست آسام نے 40 لاکھ افراد کو شہریت دینے سے انکار کر دیا ہے جن میں اکثر بنگلا دیشی مسلمان شامل ہیں۔

 


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟