24 ستمبر 2018
تازہ ترین
بلاول بھٹو نے انتخابات پر اعتراضات اٹھا دیئے

 چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے الیکشنز میں دھاندلی کی تحقیقات کیلیے پارلیمانی کمیشن کا مطالبہ کر دیا۔ قومی اسمبلی میں وزیراعظم کے انتخاب کے بعد اظہار خیال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ دیکھ رہے ہیں کہ نو منتخب وزیراعظم اپنے 100دن کے پروگرا م پر کیسے عمل کریں گے۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہم قرضوں میں ڈوبے ہوئے ہیں، ہماری معیشت صرف چند کے لیے بہتر اور باقیوں کو کوئی فائدہ نہیں پہنچاتی۔

چیئرمین پی پی پی نے کہا کہ عمران خان نے کہا تھا کہ وہ آئی ایم ایف نہیں جائیں گے لیکن ہم یہ دیکھنا چاہیں گے کہ وہ اس کا کیا متبادل فراہم کرتے ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہم یقین رکھتے ہیں کہ حکومت نیشنل ایکشن بلان پر عمل درآمد کروائے گی۔ انہوں نے کہا کہ میں نو منتخب وزیراعظم کو یاد دلانا چاہوں گا کہ وہ کسی مخصوص جماعت کے نہیں بلکہ پورے پاکستان کے وزیراعظم ہیں، وہ ان کے بھی وزیراعظم ہیں جن کو وہ زندہ لاشیں اور گدھے کہتے تھے۔

 


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟