25 ستمبر 2018
تازہ ترین
برطانیہ سے جائیداد کی واپسی کی کوئی تاریخی مثال نہیں، قانونی ماہرین

قانونی ماہرین نے کہا ہے کہ ملکی تاریخ میں ایسی کوئی مثال نہیں ہے کہ پاکستانی نژاد برطانوی شہری کی کوئی جائیداد قرق کرکے وطن واپس لائی گئی ہو۔  قانون کے مطابق کسی ملزم کو برطانیہ سے واپس لانے کیلئے ریاست پاکستان رابطہ کرسکتی ہے اس کیلئے ملک میں دائر مقدمہ یا عدالتی فیصلہ ٹھوس شواہد دینا ہوگا، برطانیہ کا سپیشل مجسٹریٹ ان شواہدکا جائزہ لیتا ہے اور متعلقہ شخص کو اپنے دفاع کا مکمل موقع دیا جاتا ہے۔ شریف خاندان کے لندن فلیٹس کی قرقی اور نواز شریف کے بیٹوں حسن نوازاور حسین نوازکو واپس لانے کے حکومتی فیصلہ کے بارے میں تحریک تحفظ عدلیہ کے سربراہ حشمت حبیب ایڈووکیٹ کا کہنا تھا کہ نیب قانون میں قانونی معاونت کی اجازت ہے ۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟