17 دسمبر 2018
تازہ ترین
برآمدی شعبہ کا سی پیک کی مراعات کا مطالبہ

  برآمدی صنعتی شعبے نے پیداواری لاگت میں کمی لا کر مسابقت بہتربنانے کے لیے بجلی وگیس کی قیمتوں میں کمی، گیس انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ سیس ختم، فضائی راستے سے ایکسپورٹ کیلئے 50 فیصد ایئرفریٹ سبسڈی، تجارتی معاہدوں پر نظرثانی، سی پیک کے تحت ملک بھر کے صنعتی شعبے کو یکساں مراعات، پلانٹس و مشینری کی درآمد پر ایک بار کیلئے ٹیکس استثنیٰ، بین الاقوامی مارکیٹس میں برانڈ کی مارکیٹنگ کیلئے مراعات کے ساتھ سازگار انفراسٹرکچر اور پالیسی اقدامات کا مطالبہ کر دیا ۔ برآمدی شعبے کی جانب سے برآمدات کے فروغ اور درآمدات میں کمی لانے کے لیے وزارت تجارت وٹیکسٹائل کو تجاویز ارسال کردی گئی  جن میں کہاگیا کہ ملک میں ٹیکسٹائل سیکٹر کی ترقی اوربرآمدات کے فروغ کیلئے ٹیکسٹائل ریسرچ اینڈ ڈیولمپنٹ بورڈ قائم کیا جائے، پولیسٹر فلامنٹ یارن کی آسانی سے دستیابی کے لیے اس پر عائد 5فیصد کی ریگولیٹری ڈیوٹی ختم کی جائے، کیمیکل کے شعبے کی برآمدات بڑھانے کے لیے ہر کنسائنمنٹ پر 50 فیصد تک ان لینڈ فریٹ سبسڈی دی جائے۔


عوامی سروے

سوال: کیا پی ٹی آئی انتخابات سے قبل کیے گئے وعدے پورے کر پائے گی؟